عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Sunday, December 8,2019 | 1441, رَبيع الثاني 10
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
2015-04 آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
سقوطِ ڈھاکہ.. ’’المورد‘‘ کا انکشاف!
:عنوان

. باطلفرقے . ایقاظ ٹائم لائن :کیٹیگری
ادارہ :مصنف



سقوطِ ڈھاکہ.. "المورد" کا انکشاف!

سقوطِ ڈھاکہ پر "المورد" کی ذمہ دار شخصیت کا یہ  پورابیان آپ سماع ٹی وی کے اِس لنک پر دیکھ سکتے (http://goo.gl/Moq12k ) یا ایقاظ (جنوری 2014) میں پڑھ سکتے ہیں۔ اس کا لب لباب یہ کہ:

ایک بڑی غلطی یہ تھی کہ دو خطوں کو ملانے کی جو وجہ بیان کی گئی وہ مذہب تھا۔ حالانکہ لوگوں کو جوڑنے والی اصل چیز جبلی ضرورتیں ہوتی ہیں۔ زیان اور رہن سہن ہو سکتا ہے۔ البتہ ایمان گھٹنے بڑھنے والی چیز ہے (لہٰذا قوموں کو جوڑنے کی بنیاد نہیں ہو سکتا)۔

ہمارا جواب:

یہاں ایک بات ’’جبلّی تقاضوں‘‘ کو اجتماعیت کی بنیاد بنانے کی ہوئی ہے اور ایک رہن سہن و لسان کو بنیاد بنانے کی۔ دونوں کی بابت ان شاءاللہ ہم نہایت مختصر بات کریں گے:

جہاں تک زبان اور رہن سہن کا تعلق ہے... تو یا تو آپ ایک قاعدہ جاری فرما دیں کہ  دنیا میں ایک کثیر الاجناس multi-ethnic، ملٹی کلچرل multi-cultural، ملٹی لنگول multi-lingual ملک ہونے پر پابندی ہے۔  دنیا کا شاید ہی کوئی ملک آپ کے اس مزعومہ قاعدہ پر پورا اتر پائے گا۔ اس پر اصرار کی صورت میں؛ دنیا کے سبھی یا بیشتر ممالک کو ایک نئے سرے سے تقسیم کرنا پڑ جائے گا۔  غرض ایک چیز نہ انسانوں کے ہاں رائج اور نہ شریعت کی فرض کردہ۔ ایسی چیز صرف ایک فلسفہ ہی کہلا سکتی ہے؛ خواہ کتنی ہی خوشنما ہو۔

رہ گئے جبلّی تقاضے... تو معلوم ہوتا ہے یہ اصحاب ’’اجتماعیت کی بنیاد‘‘ اور ’’اجتماعیت میں پختگی لانے کے ذرائع‘‘ کے مابین فرق نہیں فرما رہے؛ ورنہ ایک کو دوسرے کا متبادل قرار نہ دیتے۔  اس ذہن کے لوگوں کے ذہن میں شاید کوئی ایسا تصور ہے کہ اجتماعیت کی بنیاد ’’دین‘‘ کو قرار دینے کا مطلب ’چندہ اپیلوں‘ ایسی کوئی قابلِ ترس سرگرمی ہے۔ یا ان کا خیال ہے، اس صورت میں یہاں سب کام وعظوں اور خطبوں سے لیا جائے گا!

معاملہ یہ ہے کہ اس دنیا میں کچھ بہت بڑےبڑے اور کثیر الاجناس ممالک کوئی بھی قابلِ ذکر ’’بنیاد‘‘ رکھے بغیر اپنی اربوں کی آبادی اور اس میں پائے جانے والے بھانت بھانت کے رنگوں کو بڑی کامیابی کے ساتھ جوڑ کر رکھتے ہیں درحالیکہ ان کے پاس ان سب اجناس کو اکٹھا رکھنے کی کوئی ایک بھی مضبوط بنیاد نہیں ہوتی۔  اِسی کا نام سیاست ہے؛ جوکہ مسلمان پر بھی حرام نہیں۔ ہے یہ ہمت، حوصلے اور دوربینی کا کام۔ اس میں؛ انسانوں کی جبلی ضرورتوں کو بھی بڑی مہارت اور مشاقی کے ساتھ کام میں لایا جاتا ہے۔ لوگوں کو رام رکھنے کے سینکڑوں گر آزمائے جاتے ہیں۔  رہ گئی نالائقی، ظلم، بےحسی، کم نظری، خوردبرد اور اپنے محکوموں کے اندر محرومیاں پیدا کر بیٹھنا... تو ایک مشترکہ زبان یا رہن سہن ہی کیا، یہ بات سگے بھائیوں میں جدائی ڈال دیتی ہے۔  بہوؤں کے چولہے الگ کرا دیتی ہے۔ چنانچہ مال، عہدوں، مفادات اور آسائشوں کی حکیمانہ تقسیم سلطنت کا شیرازہ مجتمع رکھنے کے حق میں اہم ذریعہ کا درجہ رکھتی ہے۔ یہ بھی پیش نظر رہے، ایک بڑی سلطنت ایک چھوٹے ناتواں ملک کے مقابلے پر اپنے ’اجزاء‘ کو زیادہ اعلیٰ کھِلاپِلا سکتی ہے۔  طاقت کا کھیل دنیا میں ہمیشہ ایک بڑی سطح پر ہی کھیلا جاتا ہے؛ لہٰذا ایک بڑی وحدت کے اجزاء ایک چھوٹے بےبس ملک کے مقابلے پر کہیں زیادہ آسائشیں بھی پاتے ہیں۔  یعنی اگر قیادت میں حوصلہ اور بلند نگاہی ہو، تو لوگوں کی جبلی ضرورتیں بھی ایک بڑی وحدت کے اندر کہیں بڑھ کر تسکین پاتی ہیں۔ یہ وجہ ہے کہ ارب ارب کی آبادی انڈیا اور چائنا کےلیے اور لگ بھگ براعظم براعظم جتنا رقبہ امریکہ اور روس کےلیے ایک بہت بڑا پلس پوائنٹ plus point ہے۔ ان میں شامل آبادیوں کےلیے یہ چیز مادی طور پر بھی باعثِ کشش ہے۔ ’’خلافت‘‘ بھی ایسی ہی ایک اعلیٰ سطحی سیاست کا نام رہا ہے۔ غرض اموال، عہدوں اور ملازمتوں کی ایک حکیمانہ تنظیم و تقسیم، وحدت کے کامیاب ’’ذرائع‘‘ میں آتی ہے۔ وحدت کی ’’بنیاد‘‘ البتہ وحدت کے ’’ذرائع‘‘ سے ہٹ کر ایک چیز ہے اور وہ بڑے ملکوں کے پاس عموماً نہیں ہوتی؛ محض ایک دھکہ، دھونس، ذہانت اور چالاکی ہوتی ہے (ذرائع)، جس کے دم سے وہ بڑے بڑے عرصے تک انسانی اجناس کو باندھے رکھتے ہیں۔ اسلام البتہ آپ کو ایک زبردست بنیاد بھی دے دیتا ہے۔ یعنی اسلام آپ سے لیتا کچھ نہیں؛ دیتا بےپناہ ہے؛ صرف آخرت میں نہیں اِس دنیا میں بھی۔ غرض اجتماعیت میں پختگی لانے کے ’’ذرائع‘‘ اپنی جگہ اور گو ان میں بھی آپ کو کافر کی ٹکر کا ہونا ہی ہوتا ہے (نالائقوں اور کم ہمتوں کےلیے یہ دنیا بہرحال نہیں بنی)، البتہ اس اجتماعیت اور وحدت کی ’’بنیاد‘‘ رکھنے میں  مسلمان کافر پر بالادست رہ جاتا ہے بشرطیکہ اس کے تعلیم و ابلاغ کے شعبے اس ’’بنیاد‘‘ کو وہاں کی نسلوں میں گہرا کر لیں۔ ہاں اس ’’بنیاد‘‘ کو آپ اپنی نسلوں میں گہرا نہیں کرتے تو یہاں صرف آپ کا ’’ڈھاکہ‘‘ نہیں آپ کے ’’فرد‘‘ کا بھی سقوط ہو جاتا ہے؛ اور ہو رہا ہے۔

*****

سلطنت کی ’’بنیاد‘‘ اور اس کو پختگی دینے کے ’’ذرائع‘‘؛  ہر دو کی بابت اپنے نوجوان کا تصور درست کرانے کےلیے... ہم ساتویں صدی ہجری کے ایک عالم کا ایک مختصر بیان یہاں شیئر کریں گے جو انہوں نے خلافتِ عباسیہ کی بابت دے رکھا ہے، اور جس سے معلوم ہوگا کہ ’’ریاست‘‘ ایسی سنجیدہ حقیقتیں ہمارے ہاں کیسے دیکھی گئی ہیں:

واعلم- علمت الخير- أنّ هذه دولة من كبار الدّول، ساست العالمَ سياسةً ممزوجةً بالدّين والملك، فكان أخيارُ الناس وصلحاؤهم يطيعونها تديُّناً، والباقون يطيعونها رهبةً أو رغبةً، ثمّ مكثت فيها الخلافة والملك حدود ستمائة سنة

(الفخری فی الأحکام السلطانیۃ والدول الإسلامیۃ، مولفہ محمد بن علی بن طباطبا۔ طبع دار صادر۔ بیروت۔ صفحۃ 140۔ ویب لنک: http://ia601207.us.archive.org/11/items/faadsufaadsu/faadsu.pdf )

جان لو، خدا تمہیں خیر سمجھنے کی توفیق دے، یہ (خلافتِ عباسیہ) نہایت عظیم ریاستوں میں سے ایک ریاست رہی ہے جو اپنی سیاست سے پورے جہان کو چلاتی رہی ہے۔ اس کی سیاست دین اور بادشاہت کا امتزاج تھی؛ جس کا نتیجہ یہ کہ لوگوں میں سے نیکوکار اور صالحین تو اس کی اطاعت کرتے تھے دین اور عبادت کے طور پر، جبکہ باقی لوگ اس کی اطاعت کرتے کوئی خوف سے تو کوئی طمع سے۔ خلافت اور بادشاہت اس کے ہاں لگ بھگ چھ سو سال چلی۔


المورد سربرہ کے سقوط ڈھاکہ پر خیالات خود ان کی زبان سے سننے کےلیے لنک

Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ!
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
Featured-
حامد كمال الدين
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ! حامد کمال الدین دین میں طعن کر لو، جیسے مرضی دین کے ثوابت ۔۔۔
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ
Featured-
باطل- اديان
حامد كمال الدين
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ حامد کمال الدین اعتراض: اسلامی۔۔۔
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت
اصول- منہج
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
اصول- عقيدہ
حامد كمال الدين
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت حامد کمال الدین اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقر۔۔۔
کچھ مسلم معترضینِ اسلام!
باطل- جدال
حامد كمال الدين
کچھ ’مسلم‘ معترضینِ اسلام! تحریر: حامد کمال الدین پچھلے دنوں ایک ٹویٹ میرے یہاں سے  ہو۔۔۔
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر
ثقافت- خواتين
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر اجالا عثمان انٹرنیٹ سے لی گئی ایک تحریر جو ہمیں ا۔۔۔
غامدى اور عصر حاضر ميں قتال
باطل- فرقے
اعتزال
ادارہ
ایک فیس بکی بھائی نے غامدی صاحب کی جہاد کے موضوع پر ویڈیو کا ایک لنک دے کر درخواست کی تھی کہ میں اس ویڈیو کو ۔۔۔
زیادتی زیادتی میں فرق ہے
باطل- فرقے
احوال- وقائع
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ایک بڑی خلقت واضح واضح اشیاء میں بھی فرق کرنے کی روادار نہیں۔ مگر تعجب ہ۔۔۔
دین پر کسی کا اجارہ نہ ہونا.. تحریف اور من مانی کےلیے لائسنس؟
باطل- كشمكش
حامد كمال الدين
تحریر: حامد کمال الدین کہتا ہے میں اوپن ایئر میں کیمروں کے آگے جنازے کی اگلی صف کے اندر ۔۔۔
اب اس کےلیے اہلِ دین آپس میں الجھیں!؟
احوال-
باطل- شخصيات و انجمنيں
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ’’تنگ نظری‘‘ کی ایک تعریف یہ ہو سکتی ہے کہ: ایک چیز جس کی دین میں گنجائش۔۔۔
ديگر آرٹیکلز
بازيافت- سلف و مشاہير
Featured-
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
امارتِ حضرت معاویہؓ، مابین خلافت و ملوکیت نوٹ: تحریر کا عنوان ہمارا دیا ہوا ہے۔ از کلام ابن ت۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
سنت کے ساتھ بدعت کا ایک گونہ خلط... اور "فقہِ موازنات" حامد کمال الدین مغرب کے اٹھائے ہوئے ا۔۔۔
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
Featured-
حامد كمال الدين
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ! حامد کمال الدین دین میں طعن کر لو، جیسے مرضی دین کے ثوابت ۔۔۔
Featured-
بازيافت-
حامد كمال الدين
تاریخِ خلفاء سے متعلق نزاعات.. اور مدرسہ اہل الأثر حامد کمال الدین "تاریخِ خلفاء" کے تعلق س۔۔۔
Featured-
باطل- اديان
حامد كمال الدين
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ حامد کمال الدین اعتراض: اسلامی۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
لفظ  "شریعت" اور "فقہ" ہم استعمال interchangeable    ہو سکتے ہیں ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
ماتریدی-سلفی نزاع، یہاں کے مسلمانوں کو ایک نئی آزمائش میں ڈالنا حامد کمال الدین ایک اشع۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
منہجِ سلف کے احیاء کی تحریک میں ’مارٹن لوتھر‘ تلاش کرنا! حامد کمال الدین کیا کوئی وجہ ہے کہ۔۔۔
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
      کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت حامد ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
مشكوة وحى- علوم حديث
حامد كمال الدين
اناڑی ہاتھ درایت! صحیح مسلم کی ایک حدیث پر اٹھائے گئے اشکال کے ضمن میں حامد کمال الدین ۔۔۔
راہنمائى-
حامد كمال الدين
(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات ابن قدامہ مقدسی رحمہ اللہ کے متن سے۔۔۔
تنقیحات-
ثقافت- معاشرہ
حامد كمال الدين
کافروں سے مختلف نظر آنے کا مسئلہ، دار الکفر، ابن تیمیہ اور اپنے جدت پسند حامد کمال الدین دا۔۔۔
اصول- منہج
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
اصول- عقيدہ
حامد كمال الدين
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت حامد کمال الدین اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقر۔۔۔
ثقافت- خواتين
ثقافت-
حامد كمال الدين
"دردِ وفا".. ناول سے اقداری مسائل تک حامد کمال الدین کوئی پچیس تیس سال بعد ناول نام کی چیز ہاتھ لگی۔ وہ۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ حامد کمال الدین شاہ سلمان کے شروع دنوں میں ی۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی حامد کمال الدین وہ طعنے جو میرے کچھ مخلص بھائی او۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت! حامد کمال الدین ظالمو! نہ صرف یہاں کا منبر و محراب ۔۔۔
احوال-
ادارہ
تحریر:   تحریم افروز یوں تو امریکا سے مسلمانوں  کے معاملے میں کبھی خیر کی توقع رہی ہی&۔۔۔
کیٹیگری
Featured
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
باطل
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
اديان
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز