عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Sunday, December 8,2019 | 1441, رَبيع الثاني 10
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
2015-02 آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
الجزائر کا مسلمان فرانس کا ظلم نہیں بھولا
:عنوان

. احوال :کیٹیگری
عائشہ جاوید :مصنف


الجزائر کا مسلمان فرانس کا ظلم نہیں بھولا

Robert Fisk / تلخیص: عائشہ جاوید

حملہ آوروں کی شناخت ہونے سے قبل ہی ذہن میں یہ خیال ہی گردش کر رہا تھا کہ ہو نہ ہو، انکا تعلق الجزائر سے ہو گا ۔ بعد ازاں فرانسیسی پولیس نے اس امر کی تصدیق بھی کر دی۔ اس سب کا اندازہ لگانا کچھ ایسا مشکل نہ تھا ۔ الجزائر کی چھ سالہ جنگ آزادی جس میں ڈیڑھ ملین کے قریب مسلمان شہید ہوئے اور چند ہزار فرانسیسی بھی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ، اس کی خونیں بازگشت آج بھی سنائی دیتی ہے۔ 

کیا ہی اچھا ہو  اگر تمام اخبارات اور ٹی وی کی نشریات تاریخ پر ایک نظر ڈالنے میں بخل سے کام نہ لیں؛ اس بات کو مد نظر رکھتے ہوئے کہ ماضی میں کی گئی لمحوں کی خطا ئیں صدیوں کی سزا کو دعوت دیا کرتی ہیں ۔قتل و غارت ، غم و غصہ اور مجرموں کی تلاش  اخبار کی سرخیاں بنتی ہیں۔ کس نے کیا؟ کیسے کیا؟ لیکن جو ہوا وہ کیوں ہوا؟ اس کا محرک کیا تھا ؟ اس پر شاذ و نادر ہی توجہ دی جاتی ہے۔ پیرس کے واقعہ کی بابت بھی ایسا ہی کچھ سننے کو ملتا ہے  کہ کرنے والے مسلح نقاب پوش گن مین تھے، آٹومیٹک رائفلز استعمال کی گئیں ، انکا ہدف صحافی اور کارٹونسٹ تھے۔ اور حملہ آوروں کا مقصد چارلی ایبڈو میں شائع ہونے والے توہین آمیز کارٹونوں کا بدلہ لینا تھا۔ ساتھ ہی یہ بھی سب کہتے ہیں کہ اجتماعی قتل کی کوئی توجیہ نہیں تھی۔تاہم جیسا کہ ہم نے پہلے، کہا تاریخ سے نظریں چرانے کی غلطی دانستہ دہرائی گئی کہ ۱۹۵۴ سے ۱۹۶۲ تک ایک پوری قوم نے اپنی آزادی و خودمختاری کی جنگ ایک ایسے سفاک سامراجی نظام کے خلاف جاری رکھی جس نے ڈیڑھ صدی تک ان پر اپنا تسلط قائم رکھا۔ فرانس کی ساڑھے چھ ملین کی مسلم آبادی میں تقریبا ۵ ملین الجزائری ہیں ۔ معاشی طور پر پسماندہ حال اور دوسرے درجے کے شہری گردانے جاتے ہیں۔ 

فرانس کے زیر تسلط دوسری اراضی کے برعکس یہاں سامراج کا اثر و رسوخ اس حد تک تھا کہ یہاں سے پیرس کی پارلیمینٹ میں نمائندگان تک کو بھیجا جاتا تھا۔ اور اس سرزمین سے شمالی افریقہ اور سسلی پر قبضہ کرنے کی پلاننگ کی جاتی تھی۔خود الجزائر پر قبضہ کرتے ہی فرانس نے اس میں آبادکاری شروع کر دی تھی ۔مساجد کو کلیساوں میں تبدیل کیا جا رہا تھا۔ کئی عشروں تک بغاوت،پسپائی اور جبری تعاون کی ملی جلی کیفیت طاری رہی۔ ۸ مئی ۱۹۴۵ کو Sétif میں جہاں مسلمان اکثریت میں تھے ، VE (Victory in Europe Day)منایا جا رہا تھا ، اس ریلی میں ۱۰۳ یورپی باشندےمارے گئے ۔ فرانس کی حکومت نے  اشتعال میں آکر ۷۰۰ سے زائد مسلمانوں کو شہید کر دیا ۔ گردو نواح کے علاقوں پر فضائی بمباری کی گئی اور بحری فوج کی خدمات بھی حاصل کی گئیں۔ اقوام عالم اس سب پر خاموش تماشائی بنی رہیں۔ ۱۹۵۴ میں تحریک آزادی زور پکڑ گئی۔

مورخ الیسٹیر ہورن لکھتا ہے کہ الجزائر کی جدوجہد آزادی کی حکایت  حکومت  اور نیشنل لبریشن فرنٹ کی جانب سے بمباری، قتل و غارت سے لکھی گئی جس میں لاکھوں مسلمان لقمہء اجل بن گئے۔جرمن نازی اور پیرا ملٹری پولیس اس خون خرابے میں برابر کے شریک رہے۔ اکتوبر ۱۹۶۱ میں تیس ہزار افراد نے پیرس میں اس ظلم و بربریت کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی جس پر فرانسیسی پولیس کی اندھا دھند فائرنگ سے ۶۰۰ افراد شہید ہوگئے ۔زندان خانوں میں بہت سوں کو تشدد کر کے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا  ، بہت سوں کو سمندر میں پھینک دیا گیا ۔ سیکورٹی آپریشنز  چیف  جو اس سب کا ماسٹر مائنڈ تھا، وہی مجرم تھا جس پرPetain Vichy کے دور میں  چالیس بعد انسانیت سوز جرائم کی پاداش میں  فرد جرم عائد کی گئی تھی۔

یہ معرکہ خون کی ندیوں کی صورت میں اختتام پذیر ہوا۔ فرانس کے آبادکاروں نے پسپائی کو تسلیم کرنے سے انکار کیا ، سیکرٹ سروس کے توسط سے مسلمانوں پر حملے جاری رکھے اور فوج کو بھی ابھارتے رہے۔تقریبا نصف ملین مردوں عورتوں اور بچوں کو آپشن دی گئی کہ یا تو فرانس جائیں یا کفن تیار کر لیں۔ جو وہاں گئے انکی حفاظت کے وعدے بھی جھوٹے ثابت ہوئے ۔ اجتماعی ہلاکتیں ادھر بھی جاری رہیں ۔بہت سے الجزائری جوان  جو فوج کے وفادار رہے ، انکو اپنے میڈلز نگلنے پر مجبور کیا گیااور پھر انکی لاشوں کو اجتماعی قبروں میں ڈال دیا گیا۔

خودمختاری کے بعد بھی یہ حال تھا کہ فرانس  نے کٹھ پتلی حکمران بٹھا دیے ۔ سویت یونین کی طرز کی حکومت قائم ہوئی جہاں احکام و اختیاران کا منبہ کوئی اور ہی تھا نہ کہ وہ جنھون نے خود مختاری کے حصول کی خاطراپنی جانیں کھپا دی تھیں ۔یہاں تک کہ بہت عرصہ تک تمام بڑے شہروں میں پانی  کے نظام نکاسی کے نقشے فرانس نے اپنے پاس رکھے تاکہ ہر بار پائپ پھٹنے کی صورت میں کئی کئی میل تک کھدائی کرنی پڑتی تھی۔ 

پھر ۱۹۸۰ میں خانہ جنگی کا آغاز ہوا۔ جب الیکشن کے دوسرے راونڈ کو ملتوی کر دیا جس میں اسلام پسندوں کی جیت یقینی تھیFLN اور باغیوں  نے مل کر فرانسیسی آمریت کو از سر نو تازہ کر دیا۔ گرفتاریاں، پورے پورے قصبے کو موت کے گھاٹ اتارنا ، بہیمانہ قتل وغارت کا سلسلہ ایک بار پھر شروع کر دیا گیا۔ فرانس نے ملٹری لیڈرز کو بھرپور شہ دی اور ملین ڈالرز سویس بینکوں میں راتوں رات منتقل کر دیے گئے۔رد عمل کے طور پر افغان جہاد سے واپس لوٹنے والے مسلمانوں نے پہاڑوں میں موجود مجاہدین کیساتھ ملکر الجزائر میں موجود فرانسیسی باشندوں کو مار ڈالااور کچھ نے اسکے بعد عراق اور شام کا رخ کیا۔ 

فرانس کی  مدد سے امریکہ اس وقت FLN کو سپورٹ کر رہا ہے جو جنگلوں اور صحراوں میں چھپےاسلام  پسندوں کے خلاف محاذ کھولے ہوئے ہ اور ایک ایسی فوج کو اسلحہ فراہم کر رہا ہے  جس کے ہاتھوں پر ۱۹۹۰ کے دور میں ہزاروں لاکھوں شہریوں کا خون ہے ۔ کسی امریکی سفارتکار نے  ۲۰۰۳ میں عراق پر چڑھا ئی سے قبل ٹھیک ہی کہا تھا کہ امریکہ کو الجزائری حکام سے سبق سیکھنا چاہیے۔ کوئی تو وجہ ہے کہ الجزائری عراق کی جنگ لڑنے گئے اور پھر انکو ایک نیا مقصد مل گیا ...

Charlie Hebdo: Paris attack brothers' campaign of terror can be traced back to Algeria in 1954

Algeria is the post-colonial wound that still bleeds in France

مضمون کا ویب لنک:  http://goo.gl/Xwbby6

Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
      کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت حامد ۔۔۔
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ
احوال-
حامد كمال الدين
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ حامد کمال الدین شاہ سلمان کے شروع دنوں میں ی۔۔۔
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی
احوال-
حامد كمال الدين
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی حامد کمال الدین وہ طعنے جو میرے کچھ مخلص بھائی او۔۔۔
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت!
احوال-
حامد كمال الدين
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت! حامد کمال الدین ظالمو! نہ صرف یہاں کا منبر و محراب ۔۔۔
ڈیل آف دی سینچری… مسئلۂ فلسطین کے ساتھ ٹرمپ کی زورآزمائی
احوال-
ادارہ
تحریر:   تحریم افروز یوں تو امریکا سے مسلمانوں  کے معاملے میں کبھی خیر کی توقع رہی ہی&۔۔۔
ڈیل آف سنچری ، فلسطین اور امریکہ
احوال-
ادارہ
تحریر: فلک شیر کچھ عرصے سے فلسطین کے مسئلے کے حل کے لیے امریکی صدر ٹرمپ کی "صدی کی ڈیل" کا شہرہ ہے۔دو سال ۔۔۔
طیب اردگان امیر المؤمنین نہیں ہیں، غلط توقعات وابستہ نہ رکھیں۔
احوال- امت اسلام
ذيشان وڑائچ
ہمارے کچھ نوجوان طیب اردگان کے بارے میں عجیب و غریب الجھن کے شکار ہیں۔ کوئی پوچھ رہا ہے کہ۔۔۔
’’سلفیوں‘‘ کے ساتھ تھوڑی زیادتی ہو رہی ہے!
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
’’سلفیوں‘‘ کے ساتھ تھوڑی زیادتی ہو رہی ہے!    عرب داعی محترم ابو بصیر طرطوسی کے ساتھ بہت م۔۔۔
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز
احوال-
اصول- منہج
راہنمائى-
حامد كمال الدين
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز تحریر: حامد کمال الدین میری نظر میں، اس۔۔۔
ديگر آرٹیکلز
بازيافت- سلف و مشاہير
Featured-
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
امارتِ حضرت معاویہؓ، مابین خلافت و ملوکیت نوٹ: تحریر کا عنوان ہمارا دیا ہوا ہے۔ از کلام ابن ت۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
سنت کے ساتھ بدعت کا ایک گونہ خلط... اور "فقہِ موازنات" حامد کمال الدین مغرب کے اٹھائے ہوئے ا۔۔۔
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
Featured-
حامد كمال الدين
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ! حامد کمال الدین دین میں طعن کر لو، جیسے مرضی دین کے ثوابت ۔۔۔
Featured-
بازيافت-
حامد كمال الدين
تاریخِ خلفاء سے متعلق نزاعات.. اور مدرسہ اہل الأثر حامد کمال الدین "تاریخِ خلفاء" کے تعلق س۔۔۔
Featured-
باطل- اديان
حامد كمال الدين
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ حامد کمال الدین اعتراض: اسلامی۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
لفظ  "شریعت" اور "فقہ" ہم استعمال interchangeable    ہو سکتے ہیں ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
ماتریدی-سلفی نزاع، یہاں کے مسلمانوں کو ایک نئی آزمائش میں ڈالنا حامد کمال الدین ایک اشع۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
منہجِ سلف کے احیاء کی تحریک میں ’مارٹن لوتھر‘ تلاش کرنا! حامد کمال الدین کیا کوئی وجہ ہے کہ۔۔۔
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
      کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت حامد ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
مشكوة وحى- علوم حديث
حامد كمال الدين
اناڑی ہاتھ درایت! صحیح مسلم کی ایک حدیث پر اٹھائے گئے اشکال کے ضمن میں حامد کمال الدین ۔۔۔
راہنمائى-
حامد كمال الدين
(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات ابن قدامہ مقدسی رحمہ اللہ کے متن سے۔۔۔
تنقیحات-
ثقافت- معاشرہ
حامد كمال الدين
کافروں سے مختلف نظر آنے کا مسئلہ، دار الکفر، ابن تیمیہ اور اپنے جدت پسند حامد کمال الدین دا۔۔۔
اصول- منہج
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
اصول- عقيدہ
حامد كمال الدين
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت حامد کمال الدین اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقر۔۔۔
ثقافت- خواتين
ثقافت-
حامد كمال الدين
"دردِ وفا".. ناول سے اقداری مسائل تک حامد کمال الدین کوئی پچیس تیس سال بعد ناول نام کی چیز ہاتھ لگی۔ وہ۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ حامد کمال الدین شاہ سلمان کے شروع دنوں میں ی۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی حامد کمال الدین وہ طعنے جو میرے کچھ مخلص بھائی او۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت! حامد کمال الدین ظالمو! نہ صرف یہاں کا منبر و محراب ۔۔۔
احوال-
ادارہ
تحریر:   تحریم افروز یوں تو امریکا سے مسلمانوں  کے معاملے میں کبھی خیر کی توقع رہی ہی&۔۔۔
کیٹیگری
Featured
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
باطل
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
اديان
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز