عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Friday, November 22,2019 | 1441, رَبيع الأوّل 24
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
2015-01 آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
مسلم معاشرے کا ناسور: نفاق و زندقہ
:عنوان

. مشكوة وحى :کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف


مسلم معاشرے کا ناسور: نفاق و زندقہ

فِي قُلُوبِهِم مَّرَضٌ فَزَادَهُمُ اللَّـهُ مَرَضًا ۖ وَلَهُمْ عَذَابٌ أَلِيمٌ بِمَا كَانُوا يَكْذِبُونَ ﴿١٠وَإِذَا قِيلَ لَهُمْ لَا تُفْسِدُوا فِي الْأَرْضِ قَالُوا إِنَّمَا نَحْنُ مُصْلِحُونَ﴿١١ أَلَا إِنَّهُمْ هُمُ الْمُفْسِدُونَ وَلَـٰكِن لَّا يَشْعُرُونَ ﴿١٢ وَإِذَا قِيلَ لَهُمْ آمِنُوا كَمَا آمَنَ النَّاسُ قَالُوا أَنُؤْمِنُ كَمَا آمَنَ السُّفَهَاءُ ۗ أَلَا إِنَّهُمْ هُمُ السُّفَهَاءُ وَلَـٰكِن لَّا يَعْلَمُونَ  ﴿١٢ البقرۃ

ان کے دلوں میں بیماری تھی۔ تب اللہ نے ان کی بیماری اور بڑھائی۔ان کےلیے ہے ایک دردناک عذاب؛ بدلہ ان کے جھوٹ کا۔ جب اِن سے کہو زمین میں خرابی مت کرو، تو یہ بولیں: ہم تو سنوارنے والے ہیں۔ سنو! یہی ہیں خراب کار، مگر ان کو شعور نہیں۔ اور جب اِن سے کہو ایمان لاؤ جیسے لوگ ایمان لائے تو یہ بولیں کیا ہم بیوقوفوں کی طرح ایمان لے آئیں؟ سنو یہی ہیں بیوقوف، مگر جانتے نہیں ہیں -

*  فِي قُلُوبِهِم مَّرَضٌ۔

یہاں؛ اس محل کا تعین ہوا جہاں ایمان ٹھہرتا  اور قرآن اثر کرتا ہے۔ انسان میں نصب وہ آلہ جو عالمِ بالا کے ساتھ معاملہ کرتا اور حیاتِ ابدی کا نشان پاتا ہے؛ اور جسے ٹھیک رکھنا انسان کی سب سے پہلی ضرورت ہے؛ کیونکہ انسان کی تمام تر فلاح کا دارومدار اِسی کے درست رہنے پر ہے۔ یہی  شرائع کا اصل مخاطب۔ یہی خدا کی نظر پڑنے کی اصل جگہ۔ یہی خیر،  اخلاق اور پاکیزگی کی آماجگاہ۔ اور یہی زمینی آبادکاری کےلیے مطلوب اصل مادہ اور یہاں کی سرسبزی و شادابی  کا اصل راز۔ یعنی قلوب۔

اِدھر، یہیں پرکوئی مرض پل رہا تھا: شکوک، شبہات اور نفاق۔ خرابی یہاں تھی۔ وہ سب بحثیں، فلسفے جھاڑنا اور دانشوری بگھارنا تو محض علاماتِ مرض تھیں۔ خدا کی شان کو ماننا اور اس کے قانون و شریعت کا خیرمقدم کرنا، یعنی تسلیم و اذعان یہیں پر جگہ نہ پا سکا تھا۔ یہیں پر بیماری نے سر اٹھا رکھا تھا۔ اور اسی کی جڑ اکھاڑنا ضروری تھا؛ لیکن اس کی کبھی خبر ہی نہ لی گئی تھی۔

یاد رکھو: قرآنی خطاب ہو یا نبوی بیان.. یہاں ’’مرض‘‘ سے مراد دو قسم کے روگ ہیں جو قلب کو صحت اور اعتدال کی حالت سے محروم کر دیتے ہیں: باطل شبہات۔ اور غلیظ شہوات۔

1.        کفر، نفاق، بد اعتقادی، شرک، بدعات، سب کا تعلق پہلی چیز سے ہے، یعنی باطل شبہات والا روگ۔

2.        جبکہ بےحیائی، بدکاری، سفلہ پن، خدا کی نافرمانی اور حقوق کی پامالی کی جانب لپکنا اور اس کےلیے بےتاب ہونا، اس کا تعلق دوسری چیز سے ہے، یعنی غلیظ شہوات والا روگ۔

اول الذکر کا بیان: جیسے سورۃ البقرۃ کا یہ مقام، جس میں ’’مرض‘‘ سے مراد ہے: شک اور نفاق جو ان کے دلوں کو بیمار اور لاغر کرتا ہے (جلالین)۔ سورۃ الانفال }إِذْ يَقُولُ الْمُنَافِقُونَ وَالَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ مرض سے مراد: ضعفِ اعتقاد (جلالین){ سورۃ التوبہ }وَأَمَّا الَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ فَزَادَتْهُمْ رِجْسًا إِلَى رِجْسِهِمْمراد: ضعفِ اعتقاد (جلالین){، النور }أَفِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ (مراد: کفر (جلالین){ سورۃ محمد }رَأَيْتَ الَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ، مراد: شک (جلالین)،{ المدثر }وَلِيَقُولَ الَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ مراد: شک (جلالین){

ثانی الذکر جیسے: الاحزاب }فَيَطْمَعَ الَّذِي فِي قَلْبِهِ مَرَضٌ  مراد: زنا کی طلب (تفسیر سعدی){ الاحزاب }لَئِنْ لَمْ يَنْتَهِ الْمُنَافِقُونَ وَالَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ مراد: زنا کی طلب (جلالین){

یہیں سے؛ یہ بھی معلوم ہو گیا کہ قلب کی صحت اور تندرستی کیا ہے۔ یہ ہے ان ہر دو قسم کے روگ سے بچا ہونا۔ یہ کمال عافیت ہے؛ اگر خدا کسی کو نصیب کردے؛ اور یہی باربار خدا سے مانگنے کی چیز۔ اِن ہر دو روگ سے بچے ہونے کی کیا کوئی علامت ہے؟ جی ہاں۔ یقین اور فرماں برداری، جو انسان کے وجود سے پھوٹنے لگے اور آدمی معصیت سے دور بھاگنے لگے۔ نیز اِس یقین اور فرماں برداری میں آدمی کا اہل اتباع (صحابہؓ) والے معیار کی جستجو کرنا، جیساکہ آگے اس کا بیان آتا ہے۔ ایسے خوش نصیب کے تو کیا ہی کہنے!

* فَزَادَهُمُ اللَّـهُ مَرَضًا۔ نہایت عظیم تنبیہ: ایک فعل کی نسبت خدا کی طرف ہو رہی ہے! یہاں؛ تقدیر کی ایک حکمت معلوم ہوئی: یعنی بیماری سے مزید بیماری آنا۔ کوئی خرابی اپنے اندر تھی، سو خدا کی طرف سے بھی اسی میں ترقی ملی۔ پس پتہ چلا، ’’پہلا قدم‘‘ انسان کی زندگی میں کتنا اہم ہے۔ ’’راستے‘‘ آگے خودبخود چلتے ہیں۔ ضروری تو یہ تھا کہ سب باتوں کو چھوڑ اِسی ایک مسئلہ پر پریشان ہو جاتے؛ یہیں پر اہل اتباع کی ایک ایک بات اور ایک ایک ادا پر توجہ مرکوز کر لی اور ان کے پیچھےپیچھے چل دیے ہوتے۔ آدمی کا اپنی ’’سمت‘‘ طے کر لینااس کی زندگی کا سب سے اہم سوال ٹھہرا۔ یہ ’’بیج ڈالنے‘‘ والی بات ہے، باقی جو کچھ ہے وہ ’’محنت‘‘ ہے۔ بیج برا ہو تو اس پر محنت اس سے بھی بری۔ بہت سی محنتیں بہت بہت کڑوے پھل لاتی ہیں۔ پس کل توجہ، دعاء، بیداری، ہوشمندی اس بات پر کہ بنیاد میں آپ کیا ڈالتے ہیں۔ یہی تصویر ہمیں قرآن کے کچھ اور مقامات پر دکھائی جاتی ہے: وَنُقَلِّبُ أَفْئِدَتَهُمْ وَأَبْصَارَهُمْ كَمَا لَمْ يُؤْمِنُوا بِهِ أَوَّلَ مَرَّة (الانعام: 110) ’’اور ہم بھی ان کے دلوں کو اور ان کی نگاہوں کو پھیر دیں گے جس طرح یہ اس پر پہلی دفعہ ایمان نہیں لاتے‘‘۔فَلَمَّا زَاغُوا أَزَاغَ اللَّهُ قُلُوبَهُمْ (الصف:5) ’’جب وہ لوگ ٹیڑھے ہوگئے تو اللہ نے بھی ان کے دلوں کو ٹیڑھا ہی کردیا‘‘۔وَأَمَّا الَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ فَزَادَتْهُمْ رِجْسًا إِلَى رِجْسِهِمْ (التوبۃ: 125) ’’اور جن کے دلوں میں روگ ہے اس سورت نے ان میں ان کی گندگی کے ساتھ اور گندگی بڑھا دی‘‘۔ پس معصیت کی سزا ہوئی ایک اور معصیت۔ بدی کا انجام ہوا ایک اور بدی۔ دوسری طرف؛ نیکی کا بدلہ ہوا ایک اور نیکی: وَيَزِيدُ اللَّهُ الَّذِينَ اهْتَدَوْا هُدًى (مریم: 76) ’’اور جنہوں نے ہدایت پائی اللہ ان کو ہدایت میں اور بڑھا دے گا‘‘۔وَمَنْ يُؤْمِنْ بِاللَّهِ يَهْدِ قَلْبَهُ (التغابن: 11) ’’اور جو اللہ پر ایمان لائے، اللہ اس کے دل کو ہدایت دیتا ہے‘‘۔

* وَإِذَا قِيلَ لَهُمْ لَا تُفْسِدُوا فِي الْأَرْضِ۔

’’فساد فی الارض‘‘ ہے: خدا کی دھرتی میں وہ کام کرنا جن سے خدا نے روک لگا رکھی ہے۔ اور ان امور کا ضیاع کرنا جن کو بچا رکھنا خدا کو یہاں مطلوب ہے۔         (طبری)

اہل نفاق کا وصف: زمین میں فساد کرنا، یہاں خدا کی نافرمانی کی راہ سے، خدا کے منع کردہ امور کا راستہ چل کر، خدا کے عائد کردہ فرائض کو برباد کرکے، خدا کے اس دین میں شکوک پیدا کرکے جس کو مانے اور تسلیم کیے بغیر کسی شخص کا عمل خدا کے ہاں قبول ہونے والا نہیں، نیز مومنوں کو ایسا ایمان دکھا کر جو حقیقت میں شک و بےیقینی ہے، اور خدا کے دوستوں کے خلاف خدا کے ان دشمنوں کے ہاتھ مضبوط کرکے جو خدا کو اور خدا کی کتابوں اور رسولوں کو جھٹلانے والے ہیں ۔ یہ ہیں منافقین کا فساد فی الارض۔                (طبری)

قابلِ غور: آیت کی تفسیر میں حضرت سلمان فارسی ﷛ کا قول: یہ وہ لوگ ہیں جو ابھی پیدا نہیں ہوئے۔ یہاں طبریؒ سوال اٹھاتے ہیں: یہ تو طے ہے کہ آیت منافقینِ مدینہ کی بابت آئی، پھر سلمان ﷛ کے اس قول کا مطلب؟ طبری اسکی توجیہ کرتے ہیں: سلمان﷛ کا مقصد ہے کہ اب ایسے لوگ (مسلم سماج میں) نہیں رہے، مگر آئندہ کسی وقت پھر پیدا ہو جائیں گے۔

یعنی زنادقہ جو ایک بار پھر مسلم معاشروں میں کفر کی بولی بولنے لگیں گے۔

اہل زمین کو خدا کے حکم کی پروا نہ ہونا... زمین پر کھلےعام خدا کی نافرمانی ہونا... یہ زمین کی تباہی اور اس کے وسائل کا اجاڑا ہے۔ آثار سے ثابت ہے، تمام اہل زمین اس کی پاداش بھگتتے، غلے اور اناج تک سے برکت اٹھ جاتی، اور  چرند و پرند تک اس کی قیمت دیتے ہیں۔

* قَالُوا إِنَّمَا نَحْنُ مُصْلِحُونَ بولے: ارے ہم ہی تو سنوارنے والے ہیں! معصیت اور کفر پر مبنی وہ ایک ناسور کردار جس پر دعوائے ایمان کا خول چڑھا رکھا گیا ہے، ایک مسلم معاشرے میں... جب بھی انہیں یہ روش چھوڑنے کا کہا جائے، اور تقاضا کیا جائے کہ کافروں کو ان سے وہی رویہ دیکھنے کو ملے جو مومنوں کے شایانِ شان ہے، یعنی رسولؐ اور اس کی شریعت سے سچی وفاداری اور خدا کے دشمنوں سے صاف بیزاری... وہاں یہ اپنی ذہانت و پارسائی اور اپنی پالیسیوں کے قصے لے کر بیٹھ جاتے ہیں اور الٹا سمجھانے والے کو مرعوب کرتے ہیں۔ یہ ہوا اُس فساد فی الارض کا نقطۂ عروج: یعنی حقائق کو الٹ دینا اور اصطلاحات ہی میں تصرف کرنا۔ خیر کا نام شر اور شر کا نام خیر! ایک خرابی اذہان کے اندر خرابی ہی رہے تو سدھرنے کا امکان باقی اور خدا کی جانب واپسی (توبہ) کا راستہ کھلا رہے گا۔ اس خرابی میں جب تک ایک ’نظریاتی حسن‘ پیدا نہ کرایا جائے تب تک یہ غیرمحفوظ ہے۔ پس یہاں ایسی نکتہ وری درکار ہے جو ترکِ شریعت اور ترویجِ کفر کےلیے باقاعدہ ایک کشش اور پزیرائی پیدا کرائے! شیطان کا کام معاشرے میں کبھی مکمل نہ ہوگا جب تک وہ خدا کی نافرمانی کو ’دانش‘ اور ’فلسفے‘ کے ڈھیروں تاؤ نہ دلوائے۔ نفاق اور زندقہ اس کے بغیر ادھورا ہے۔

*  أَلَا إِنَّهُمْ هُمُ الْمُفْسِدُونَ۔ ذرا تاکید کے لوازم پر غور کرتے جائیے۔ پہلے  أَلَا۔ پھر إِنَّ۔ پھر إِنَّ کے ساتھ آئے ہوئے ھُمۡ کے ساتھ ایک بار پھر ھُمۡ۔ پھر ال جو حصر کےلیے ہے اور یہاں تاکید کے مفہوم کو بڑھاتا ہے۔ یعنی چھوٹے سے ایک جملے میں چار مؤکدات!!! قرآن مجید کا کسی چیز کو اتنی تاکید کے ساتھ فساد کہنا ایک مومن نفس کو ہلا کر رکھ دینے والا ہے۔

* آمِنُوا كَمَا آمَنَ النَّاسُ یعنی صحابہؓ والا ایمان۔ اتباع کا وہ نمونہ جسے آسمان کی سند حاصل ہے۔ رسولؐ کے پیچھے چلنے کا وہ پیمانہ جو نجات کا موجب ہے۔

* قَالُوا أَنُؤْمِنُ كَمَا آمَنَ السُّفَهَاءُ ۔ یعنی صحابہؓ کی طرح ایمان لانا انہیں بیوقوفی نظر آتا ہے۔ واقعتاً اس میں وطن تک چھوٹ جاتے اور رشتے تک قربان ہو جاتے ہیں۔ یعنی ہجرت اور مشرکین سے براءت۔ خدا کے دشمنوں سے ناطہ توڑ لینا اور رسولؐ اور اس کی شریعت سے دشمنی کرنے والوں کے ساتھ دشمنی کرنے تک چلا جانا۔ اس کے بغیر ’’ایمان‘‘ کا کونسا تصور ہے؟ حقیقت کا سراغ پا لینے والا، جو  خدا اور اس کے انعام سے واقف ہے، اس کی نظر میں ایسی وفاداری ہی دانائی ہے۔ مگر منافق جو ان حقیقتوں کو دیکھنے سے اندھا ہے اور اس کےلیے یہی دنیا ہے اُس کی نظر میں اس سے بڑھ کر بیوقوفی کوئی نہیں کہ یہ سب کچھ ایک اَن دیکھے خدا کی محبت پر وار دیا جائے۔ پس یہاں حقیقتوں کے دیکھنے پر ہی اصل جھگڑا ہے؛ جوکہ ایک دوسرے کی نظر اور عقل کو مشکوک ٹھہرانے تک چلا جاتا ہے۔ اور؛ لامحالہ ان میں سے کسی ایک کی بات درست ہے!

* أَلَا إِنَّهُمْ هُمُ السُّفَهَاءُ۔ تاکید کے وہی لوازم۔ ابدالآباد تک رہنے والی زندگی کو چند روزہ مفاد پر قربان کرکے اپنے آپ کو دانا سمجھنا اور ایسا نہ کرنے والے کو احمق جاننا.. اس سے زیادہ مضحکہ خیز کردار بھلا کیا ہوگا۔ اپنے پیر پر کلہاڑی مارنا تو جہالت ہے ہی، ایسا نہ کرنے والے کو عقل کا ہلکا جاننا اور اس پر بڑی بڑی بلیغ چوٹیں بھی کرنا! یہاں؛ ہر دو فریق ایک دوسرے کو بیوقوف ہی جانیں گے۔ اس پر تعجب کیسا؛ یہ تو لامحالہ ہونا ہے۔ پس  اصل دیکھنے کی چیز یہاں ہردو فریق کا ایک دوسرے کی بابت یہ دعویٰ نہیں بلکہ اس دعویٰ کی صحت ہوگی۔

(نوٹ: ہمارے ان قرآنی اسباق میں تفسیر سعدی کو بنیاد بنا یا گیا۔ دیگر مراجع اضافی طور پر شامل ہوتے ہیں)

Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
اناڑی ہاتھ درایت
تنقیحات-
Featured-
مشكوة وحى- علوم حديث
حامد كمال الدين
اناڑی ہاتھ درایت! صحیح مسلم کی ایک حدیث پر اٹھائے گئے اشکال کے ضمن میں حامد کمال الدین ۔۔۔
ابن عباس : تفسیر قرآن چار پہلوؤں سے
مشكوة وحى- علوم قرآن
حامد كمال الدين
22 ابن عباس﷠: تفسیر قرآن چار پہلوؤں ۔۔۔
غصہ مت کرو
مشكوة وحى-
مریم عزیز
17 حدیثِ نبوی ’’غصہ مت کرو‘‘ ار۔۔۔
اللہ کے کلام سے۔ اپریل 2014
مشكوة وحى-
ادارہ
إنَّ اللَّهَ يَأْمُرُكُمْ أَنْ تُؤَدُّوا الْأَمَانَاتِ إلَى أَهْلِهَا وَإِذَا حَكَمْتُمْ بَيْنَ النَّاسِ أَ۔۔۔
شرح دعائے قنوت
مشكوة وحى- توضيح مفہومات
رقائق- اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
شرح دعائے قنوت نوٹ: ’’دعائے قنوت‘‘ ایک ایک جملہ کی علیحدہ شرح کےلیے آپ اس لنک پر جا سکتے ہیں۔ عَنِ ۔۔۔
خدا واسطے کی اخوت
مشكوة وحى- فرمايا رسول اللہ ﷺ نے
حامد كمال الدين
(حديث:‏152‏)[1] عن محمد بن سوقة أن رسول الله عليه السلام قال ما أحدث عبد أخا يواخيه في الله إلا رفعه ا۔۔۔
کائنات کا مالک اور مخلوق.. رُوبرُو
مشكوة وحى- توضيح مفہومات
حامد كمال الدين
هَلْ يَنظُرُونَ إِلَّا أَن يَأْتِيَهُمُ اللَّـهُ فِي ظُلَلٍ مِّنَ الْغَمَامِ وَالْمَلَائِكَةُ وَقُضِيَ الْأ۔۔۔
بِحَبۡلِ اللّٰہِ جَمِیۡعاً کی تفسیر: "جماعۃ المسلمین"
مشكوة وحى- اللہ كے كلام سے
حامد كمال الدين
ایک رکاکت بھری (naïve)  عربی کا سہارا لیتے ہوئے اہل مورد کی جانب سے بار بار ’نکتہ‘ بیان کیا جاتا ہ۔۔۔
حاکمیتِ خداوندی.. اجتماعِ انسانی.. اور سیاست
مشكوة وحى-
ادارہ
کتاب کا سبق حاکمیتِ خداوندی.. اجتماعِ انسانی.. اور سیاست إِنَّا أَنزَلْنَا التَّوْرَاةَ فِيهَا هُدًى وَنُورٌ۔۔۔
ديگر آرٹیکلز
بازيافت- سلف و مشاہير
Featured-
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
امارتِ حضرت معاویہؓ، مابین خلافت و ملوکیت نوٹ: تحریر کا عنوان ہمارا دیا ہوا ہے۔ از کلام ابن ت۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
سنت کے ساتھ بدعت کا ایک گونہ خلط... اور "فقہِ موازنات" حامد کمال الدین مغرب کے اٹھائے ہوئے ا۔۔۔
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
Featured-
حامد كمال الدين
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ! حامد کمال الدین دین میں طعن کر لو، جیسے مرضی دین کے ثوابت ۔۔۔
Featured-
بازيافت-
حامد كمال الدين
تاریخِ خلفاء سے متعلق نزاعات.. اور مدرسہ اہل الأثر حامد کمال الدین "تاریخِ خلفاء" کے تعلق س۔۔۔
Featured-
باطل- اديان
حامد كمال الدين
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ حامد کمال الدین اعتراض: اسلامی۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
لفظ  "شریعت" اور "فقہ" ہم استعمال interchangeable    ہو سکتے ہیں ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
ماتریدی-سلفی نزاع، یہاں کے مسلمانوں کو ایک نئی آزمائش میں ڈالنا حامد کمال الدین ایک اشع۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
منہجِ سلف کے احیاء کی تحریک میں ’مارٹن لوتھر‘ تلاش کرنا! حامد کمال الدین کیا کوئی وجہ ہے کہ۔۔۔
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
      کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت حامد ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
مشكوة وحى- علوم حديث
حامد كمال الدين
اناڑی ہاتھ درایت! صحیح مسلم کی ایک حدیث پر اٹھائے گئے اشکال کے ضمن میں حامد کمال الدین ۔۔۔
راہنمائى-
حامد كمال الدين
(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات ابن قدامہ مقدسی رحمہ اللہ کے متن سے۔۔۔
تنقیحات-
ثقافت- معاشرہ
حامد كمال الدين
کافروں سے مختلف نظر آنے کا مسئلہ، دار الکفر، ابن تیمیہ اور اپنے جدت پسند حامد کمال الدین دا۔۔۔
اصول- منہج
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
اصول- عقيدہ
حامد كمال الدين
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت حامد کمال الدین اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقر۔۔۔
ثقافت- خواتين
ثقافت-
حامد كمال الدين
"دردِ وفا".. ناول سے اقداری مسائل تک حامد کمال الدین کوئی پچیس تیس سال بعد ناول نام کی چیز ہاتھ لگی۔ وہ۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ حامد کمال الدین شاہ سلمان کے شروع دنوں میں ی۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی حامد کمال الدین وہ طعنے جو میرے کچھ مخلص بھائی او۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت! حامد کمال الدین ظالمو! نہ صرف یہاں کا منبر و محراب ۔۔۔
احوال-
ادارہ
تحریر:   تحریم افروز یوں تو امریکا سے مسلمانوں  کے معاملے میں کبھی خیر کی توقع رہی ہی&۔۔۔
کیٹیگری
Featured
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
باطل
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
اديان
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز