عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Sunday, July 21,2019 | 1440, ذوالقعدة 17
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
Angrezinizam آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
کون سی جمہوریت؟
:عنوان

اس جمہوریت پر یہاں کے لادین تنقید کریں تو اس کی ذمہ داری یہاں کے دینداروں کو اٹھوا دی جائے۔ اسی جمہوریت پر کوئی اسلامی بنیادوں پہ تنقید کرے تو اس کا رخ جمہوریت کے مغربی مفہوم کی طرف کر دیا جائے!۔

. باطلنظام :کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف

"یہ وہی انگریزی نظام ہے" 3

فصل اول


ہمارے اس مضمون میں، بلکہ جمہوریت کی بابت ہمارے بیشتر مضامین میں، ایک معروضی (Objective)  انداز کی گفتگو ہو سکتا ہے آپ کو کم ملے۔ وجہ یہ نہیں کہ معروضی انداز کی افادیت ہماری نگاہ سے روپوش ہے۔ وجہ یہ ہے کہ خود اسی موضوع کا کچھ یہ تقاضا سا ہو گیا ہے۔ یہ مضمون پڑھنے کے بعد امید ہے آپ ہمارے ساتھ اتفاق فرمائیں گے...

معاملہ کچھ یوں ہے کہ جمہوریت کے بارے میں کوئی ایک بات کہنا خاصا مشکل بنا دیا گیا۔ اس کے اتنے چہرے ہیں کہ اس پر ’معروضی انداز‘ سے بات کرنا کسی مسئلہ کا حل نہیں رہ گیا ہے۔ جمہوریت کے بارے میں آپ کچھ بھی کہہ لیں، آپ کوئی ’نرالی‘ بات نہ کریں گے! اس کے بارے میں سب کچھ کہا جا چکا ہے! ایک خاصی بڑی تعداد یہاں آپ ایسے لوگوں کی پائیں گے جو ’ایک لحاظ سے‘ جمہوریت کو ’بجا طور پر کفر اور شرک‘ مانتے ہوں گے تو کسی ’دوسرے لحاظ‘ سے وہ جمہوریت کو حق ثابت کرتے ہوئے دیکھے جا سکیں گے۔ چنانچہ جمہوریت کو آپ حرام کہہ کر کوئی نئی بات کریں گے اور نہ حلال کہہ کر!

معروضی انداز کسی چیز کا ثبوت دینے کےلیے اختیار کیا جاتا ہے۔ جمہوریت کی پیچیدگی ’ثبوت‘ دینے یا نہ دینے سے بڑھ کر ہے۔ ہماری اُلجھن یہ ہے کہ جمہوریت کو دیکھنے کےلیے یہاں بے شمار ’اعتبار‘ ہیں؛ کسی اعتبار سے یہ کفر ہے تو کسی اعتبار سے یہ عین اسلام ہے۔ کسی اعتبار سے یہ حرام ہے جبکہ کسی اعتبار سے یہ حلال ہی نہیں واجب بلکہ اَوجب الواجبات ہے۔ کسی اعتبار سے یہ مغربی ہے اور کسی اعتبار سے مشرقی بلکہ قرون اولیٰ اور سلف صالحین کا ورثہ! آپ اس کی مذمت کریں تب اوپرے نہیں لگیں گے۔ آپ اس کی تعریف کریں تب برے نہیں لگیں گے۔ دونوں صورتوں میں آپ کی بات ’درست‘ مانی جاسکتی ہے البتہ اس کا معنی و مراد، سننے والے اپنے اپنے ’مفہوم‘ کے مطابق متعین کریں گے۔ اب ایسے میں ایک ’معروضی انداز‘ کی گفتگو کیا کر پائے گی!؟

بیک وقت بہت سے مفہومات رکھنے کے باعث جمہوریت اب ایک ایسی چیز بن گئی ہے کہ اس کے خلاف ’دلائل‘ بڑی حد تک بے اثر ہو جاتے ہیں۔ اس پر کی گئی تنقید اور مذمت بڑی حد تک بے سود ثابت ہوتی ہے۔ آپ کی علمی تنقید سے ’پورا پورا اتفاق‘ کر لیا جاتا ہے مگر اس کو جمہوریت کے اُس مفہوم کی طرف پھیر دیا جاتا ہے جو ’مغرب‘ سے تعلق رکھتا ہے۔ ’مشرق‘ کی جمہوریت پھر بچی رہتی ہے! یہ ایک ’زرہ بکتر‘ ہے جو اسے پہنا دیا گیا ہے اور اس کے باعث اس پر کئے گئے سب وار ناکام جاتے ہیں۔ البتہ اس کی تحسین ہو تو وہ پوری کی پوری اس تک پہنچ جاتی ہے!

جمہوریت کو بہت سی قسموں میں تقسیم کر کے اس میں یہ خوبی پیدا کر لی گئی ہے کہ ہر قسم کی علمی تنقید کو طرح دے جایا کرے! اس جمہوریت پر یہاں کے لادین تنقید کریں تو اس کی ذمہ داری یہاں کے دینداروں کو اٹھوا دی جائے اور اس کا رخ یہاں کی مشرقی اور ’مذہبی‘ مجبوریوں کی طرف کر دیا جائے۔ اسی جمہوریت پر کوئی اسلامی بنیادوں پہ تنقید کرے تو اس کا رخ جمہوریت کے مغربی مفہوم کی طرف کر دیا جائے! البتہ وہ نظام جو جمہوریت کے نام پر یہاں رائج ہے وہ اُس تنقید سے بھی بچا لیا جائے جو یہاں کے ’لادین اصول پسند‘ اس پر کرتے ہیں اور اُس تنقید سے بھی اس کو محفوظ رکھا جائے جو یہاں کے ’مسلم اصول پسند‘ اس پر کرتے ہیں!

ایک عرصے سے ہمارے یہاں جمہوریت کے خلاف اسلامی بنیادوں پر خاصے علمی انداز میں کام کرنے کی بھی متعدد قابل قدر کوششیں ہوتی آئی ہیں، جو قابل ستائش ہیں۔ جمہوریت کے خلاف خاصے نصابی(Academic)  انداز میں بھی بہت کچھ لکھا گیا اور کئی ایک اچھی تصنیفات اس موضوع پر اب دستیاب ہیں۔ بلاشبہ یہ ہمارے نظریاتی لٹریچر میں ایک بیش قیمت اضافہ ہے اور ان تصنیفات کی اہمیت کم کرنا ہرگز ہمارے پیش نظر نہیں ہے، کیونکہ جمہوریت کے خلاف ایک معروضی انداز سے دیے گئے دلائل بہرحال اپنی جگہ اہم اور ضروری ہیں... البتہ یہ وہ کُل کام نہیں جو اس شجرۂ خبیثہ کو اکھاڑ دینے کےلیے ضروری ہے۔

بلاشبہ جو ہم لکھیں گے وہ بھی ہرگز وہ کل کام نہ ہوگا جو اس شجرۂ خبیثہ کو جڑ سے اکھاڑنے کےلیے مطلوب ہے۔ لکھنے لکھانے کے سوا بہت کام ہیں جو اس میدان میں عملاً کئے جانا ہیں۔ ہماری بھی ہرگز یہ مراد نہیں کہ اس میدان میں جو کوئی کمی تھی وہ ہماری ان تحریروں سے اب پوری ہوا چاہتی ہے۔ مراد صرف یہ ہے کہ جمہوریت کے کریہہ جثہ سے تدلیس کی یہ زرہ اتارنے کی کوشش ہمارا مقصود ہے اور ہماری اس تحریر یا ان تحریروں کا یہی اصل ہدف۔

دراصل یہ وہ زرہ بکتر ہے جس کے باعث اس نظام پر کئے گئے بہت سے علمی اور مدلل وار بھی ناکام چلے جاتے رہے ہیں۔ کیونکہ دینی حلقوں کی جانب سے کئے جانے والے ان علمی و نظریاتی حملوں کا رخ بڑی سمجھداری کے ساتھ جمہوریت کے کچھ ’غیر اسلامی‘ اور ’مغربی‘ مفہومات کی جانب پھیر دیا جاتا رہا ہے اور نفسِ جمہوریت اس تدبیر سے صاف بچا لی جاتی رہی۔ جمہوریت پر ان علمی اور اکادمی (Academic) انداز کے حملوں کی افادیت اب بھی ختم نہیں ہو گئی۔ اس پر کام کی گنجائش یقینا باقی ہے بلکہ اس میں پہلے سے زیادہ تیزی آجانا بھی بے حد مطلوب ہے مگر اس کے ساتھ ساتھ جس بات کی ضرورت ہے وہ یہ کہ اس کے جس جس حصے کو ممکن ہو تدلیس کی اس زرہ بکتر سے ہی محروم اور برہنہ کر دیا جائے۔ تب اس پر کئے گئے سب ’علمی حملے‘ اور ’معروضی دلائل‘ بھی خود بخود کارگر ہونے لگیں گے۔یوں جمہوریت کے خلاف پچھلے کئی عشروں میں جو بڑی حد تک ایک نظری انداز کا کام ہوا ہے خود وہ کام بھی آپ سے آپ کارآمد اور ’عملی‘ ہو جائے گا۔

اس بات کی بہرحال ضرورت ہے۔ ہماری یہ تحریر یا سلسلۂ تحاریر اسی سمت بڑھنے کی ایک کوشش ہیں... ... خلاصہ یہ کہ:

جہاں تک جمہوریت پر ایک علمی انداز کا کام کرنے کا تعلق ہے تو وہ ہمارے اردو اسلامی لٹریچر میں مفقود نہیں۔ اس میں اضافہ کی گنجائش یقینا ہے مگر اس سے زیادہ جس بات کی گنجائش اور ضرورت ہے وہ یہ کہ جتنا علمی کام اس پر اب تک ہو چکا ہے اسی کو مؤثر کیا جائے یعنی وہ علمی کام جو اب تک ہو چکا ہے جمہوریت کے اس ناروا وجود کو پہلے اس کی زد میں لے آیا جائے۔ اس کے بغیر، ہم سمجھتے ہیں، جمہوریت پر ایک معروضی انداز میں لکھا گیا کوئی ایک آدھ مقالہ یا کتاب یا حتی کہ کوئی لائبریری بھی ہو وہ کوئی بہت بڑا فرق نہ لا سکے گی اور یہ ’الجھن‘ جو اِس کے گرد نہایت سمجھداری کے ساتھ ڈال رکھی گئی ہے، جوں کی توں باقی رہے گی۔

 

گزشتہ                                             آگے پڑھیے

 

 

Print Article
  یہ وہی انگریزی نظام ہے
  جمہوریت
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
کچھ مسلم معترضینِ اسلام!
Featured-
باطل- جدال
حامد كمال الدين
کچھ ’مسلم‘ معترضینِ اسلام! تحریر: حامد کمال الدین پچھلے دنوں ایک ٹویٹ میرے یہاں سے  ہو۔۔۔
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر
Featured-
ثقافت- خواتين
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر اجالا عثمان انٹرنیٹ سے لی گئی ایک تحریر جو ہمیں ا۔۔۔
غامدى اور عصر حاضر ميں قتال
باطل- فرقے
اعتزال
ادارہ
ایک فیس بکی بھائی نے غامدی صاحب کی جہاد کے موضوع پر ویڈیو کا ایک لنک دے کر درخواست کی تھی کہ میں اس ویڈیو کو ۔۔۔
زیادتی زیادتی میں فرق ہے
باطل- فرقے
احوال- وقائع
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ایک بڑی خلقت واضح واضح اشیاء میں بھی فرق کرنے کی روادار نہیں۔ مگر تعجب ہ۔۔۔
دین پر کسی کا اجارہ نہ ہونا.. تحریف اور من مانی کےلیے لائسنس؟
باطل- كشمكش
حامد كمال الدين
تحریر: حامد کمال الدین کہتا ہے میں اوپن ایئر میں کیمروں کے آگے جنازے کی اگلی صف کے اندر ۔۔۔
اب اس کےلیے اہلِ دین آپس میں الجھیں!؟
احوال-
باطل- شخصيات و انجمنيں
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ’’تنگ نظری‘‘ کی ایک تعریف یہ ہو سکتی ہے کہ: ایک چیز جس کی دین میں گنجائش۔۔۔
شرک کے تہواروں پر مبارکباد دینے والے حضرات کے دلائل، ایک مختصر جائزہ
باطل- اديان
شیخ خباب بن مروان الحمد
شرک کے تہواروں پر مبارکباد دینے والے حضرات کے دلائل، ایک مختصر جائزہ تحریر: شیخ خباب بن مروان ا۔۔۔
دیوالی کی مٹھائی
باطل- اديان
حامد كمال الدين
دیوالی کی مٹھائی تحریر: سرفراز فیضی(داعی: صوبائی جمعیت اہل حدیث ممبئی ) *سوال*: کیا دیوالی کی مبارک باد دینا ۔۔۔
بائیکاٹ کا ہتھیار.. اور قومی یکسوئی کا فقدان
احوال-
باطل- كشمكش
تنقیحات-
حامد كمال الدين
بائیکاٹ کا ہتھیار.. اور قومی یکسوئی کا فقدان ہر بار جب کسی دردمند کی جانب سے مسلم عوام کو بائیکاٹ کا ۔۔۔
ديگر آرٹیکلز
ثقافت- خواتين
ثقافت-
Featured-
حامد كمال الدين
"دردِ وفا".. ناول سے اقداری مسائل تک حامد کمال الدین کوئی پچیس تیس سال بعد ناول نام کی چیز ہاتھ لگی۔ وہ۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ حامد کمال الدین شاہ سلمان کے شروع دنوں میں ی۔۔۔
احوال-
Featured-
حامد كمال الدين
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی حامد کمال الدین وہ طعنے جو میرے کچھ مخلص بھائی او۔۔۔
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت! حامد کمال الدین ظالمو! نہ صرف یہاں کا منبر و محراب ۔۔۔
Featured-
احوال-
Featured-
ادارہ
تحریر:   تحریم افروز یوں تو امریکا سے مسلمانوں  کے معاملے میں کبھی خیر کی توقع رہی ہی&۔۔۔
Featured-
احوال-
ادارہ
کچھ عرصے سے فلسطین کے مسئلے کے حل کے لیے امریکی صدر ٹرمپ کی "صدی کی ڈیل" کا شہرہ ہے۔دو سال بل جب ٹرمپ نے اق۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین بعض مباحث بروقت بیان نہ ہوں تو پڑھنے پڑھانے والوں کے حق میں ایک زیادتی رہ جاتی ہے۔ جذبہ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
https://twitter.com/Hamidkamaluddin کچھ چیزوں کے ساتھ ’’تعامل‘‘ کا ایک مناسب تر انداز انہیں نظر۔۔۔
Featured-
باطل- جدال
حامد كمال الدين
کچھ ’مسلم‘ معترضینِ اسلام! تحریر: حامد کمال الدین پچھلے دنوں ایک ٹویٹ میرے یہاں سے  ہو۔۔۔
اصول- منہج
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
پراپیگنڈہ وار propaganda war میں سیگ منٹیشن segmentation (جزء کاری) ناگزیر ہوتی ہے۔ یعنی معاملے کو ای۔۔۔
بازيافت-
ادارہ
ہجرت کے پندرہ سو سال بعد! حافظ یوسف سراج کون مانے؟ کسے یقیں آئے؟ وہ چار قدم تاریخِ ان۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
میرے اسلام پسندو! پوزیشنیں بانٹ کر کھیلو؛ اور چال لمبی تحریر: حامد کمال الدین یہ درست ہے کہ۔۔۔
احوال- امت اسلام
ذيشان وڑائچ
ہمارے کچھ نوجوان طیب اردگان کے بارے میں عجیب و غریب الجھن کے شکار ہیں۔ کوئی پوچھ رہا ہے کہ۔۔۔
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
’’سلفیوں‘‘ کے ساتھ تھوڑی زیادتی ہو رہی ہے!    عرب داعی محترم ابو بصیر طرطوسی کے ساتھ بہت م۔۔۔
اصول- عقيدہ
اداریہ-
حامد كمال الدين
شرکِ ’’ہیومن ازم‘‘ کی یلغار..  اور امت کا طائفہ منصورہ حالات کو سرسری انداز میں پڑھنا... واقعات م۔۔۔
احوال-
اصول- منہج
راہنمائى-
حامد كمال الدين
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز تحریر: حامد کمال الدین میری نظر میں، اس۔۔۔
Featured-
ثقافت- خواتين
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر اجالا عثمان انٹرنیٹ سے لی گئی ایک تحریر جو ہمیں ا۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
"نبوی منہج" سے متعلق ایک مغالطہ کا ازالہ حامد کمال الدین ایک تحریکی عمل سے متعلق "نبوی منہج۔۔۔
کیٹیگری
Featured
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
منہج
حامد كمال الدين
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
ادارہ
تاريخ
ادارہ
سلف و مشاہير
مہتاب عزيز
مزيد ۔۔۔
باطل
جدال
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فرقےاعتزال
ادارہ
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
خواتين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ابن علی
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
ادارہ
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز