عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Saturday, September 18,2021 | 1443, صَفَر 10
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
weekly آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
جمہوری راستہ اختیار کرنے پر، دینداروں کے یہاں دو انتہائیں
:عنوان

۔ "اصل" اور "خروج عن الاصل" کے مابین جو ایک فرق ہوتا ہے… اس کا ادراک اور احساس رہنا آپ کا ایک قیمتی اثاثہ ہوتا ہے۔

:کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف

2

جمہوری راستہ اختیار کرنے پر، دینداروں کے یہاں دو انتہائیں

تحریر: حامد کمال الدین

مضمون: خلافتِ نبوت سے عدولی، ملوکیتی ادوار پر جمہوری فارمیٹ کا قیاس

پہلی قسط: مقدمہ، ابن تیمیہؒ کی ایک تأصیل سے

دوسری قسط: جمہوری راستہ اختیار کرنے پر، دینداروں کے یہاں دو انتہائیں

تیسری قسط: جمہوری پیکیج، "کمتر برائی"… یا "آئیڈیل"؟

چوتھی قسط: جمہوریت… اور اسلام کی تفسیرِ نو

پانچویں قسط: جمہوریت کو "کلمہ" پڑھانا کیا ضروری ہے؟

چھٹی قسط: جمہوری راستہ… اور اسلامی انقلاب

ساتویں قسط: "اقتدار" سے بھی بڑھ کر فی الحال ہمارے پریشان ہونے کی چیز

آٹھویں قسط: دینداروں کے معاشرے میں آگے بڑھنے کو، جمہوریت واحد راستہ نہیں

دوسری قسط

کچھ شک نہیں، سیاسہ شرعیہ میں بہت مقامات پر آپ کو "اصل" سے نکلنا پڑتا ہے۔ اس سے انکار پر ہی ہمیشہ اڑے رہنا دین اور دنیا ہر دو دولت کھو دینے کا موجب ہو سکتا ہے۔ یہ ایک مبدأ principle ہے، جس پر مراسلہ نگار کی ذکر کردہ ہر ہر مثال میرے نزدیک حق ہے، خواہ وہ اسلامی تاریخ کے گزشتہ ادوار میں "اصل" سے کچھ عدول ہو جانے سے متعلق ہو، یا اُس مجوزہ چیز سے متعلق جسے دورِ حاضر کے حوالہ سے فاضل مراسلہ نگار نے "ابوالکلام آزاد اور ابوالاعلیٰ مودودی کا اجتہاد" قرار دیا ہے اور جس میں آزادؒ اور مودوددیؒ اکیلے نہیں، بہت سے اہل علم کی تقریر اس پر موجود ہے… اس مؤخرالذکر "اجتہاد" کی فی الحال تفصیل میں جائے بغیر۔

اس میں اتنی سی بات کا اضافہ کر لیا جائے کہ "اصل" اور "خروج عن الاصل" کے مابین جو ایک فرق ہوتا ہے… اس کا ادراک اور احساس رہنا آپ کا ایک قیمتی اثاثہ ہوتا ہے۔ اس اثاثے کی بقاء اسی ایک بات پر منحصر ہے کہ عاملینِ اسلام کے یہاں اٹھتے بیٹھتے اس کا ذکر ہو، اور پڑھنے سیکھنے والوں کا ٹھیک ٹھاک زور اسی"فرق" کی یاددَہانی پر صرف کروا رکھا جائے۔ سلامتی کا سب سامان سمجھیے اِسی میں پڑا ہوتا ہے۔ یہی، تربیت اور ذہن سازی میں آپ کے ہاں"معیار" قائم رہنے کی اصل کسوٹی۔ اس سے ہاتھ چھوٹنا، یا اس پر گرفت ڈھیلی ہونا، آپ کو پورے کھیل سے آؤٹ کروا دیتا ہے، جیسا کہ فی الوقت آپ دیکھ سکتے ہیں۔ اس محاذ پر ناکام رہنا مجھ طالب علم کی نظر میں اتنا ہی نقصان دہ ہے جتنا کہ عندالضرورة "خروج عن الأصل" سے انکار پر اڑے رہنا، یا اس سے بھی کہیں بڑھ کر ضرررساں۔

پس یہاں دو انتہائیں ہوئیں: ایک تفریط۔ ایک اِفراط۔ جبکہ ایک وسط، جو کہ حق ہے:

ایک انتہا: "اصل" سے "عدول" کے متعلق "ضرورات" کا اعتبار ہی نہ کرنا اور اپنے اس جمود سے جس کو آدمی اپنی کوتاہ نظری کے باعث"استقامت على الحق" سمجھ رہا ہوتا ہے، مسلمانوں کے سب دین اور دنیا کا ستیاناس کر بیٹھنا، جو کہ آج بھی فضلاء کی ایک کثیر تعداد کا پسندیدہ مذہب ہے۔ "موازنۂ مصالح و مفاسد" ایسے ایک معلوم فقہی قاعدہ کا اس طبقہ کے ہاں مذاق تک اڑا لیا جاتا ہے۔ سب سے آسان اور کم لاگت حق پرستی شاید یہی باور کی جاتی ہو! یا یوں کہیے، "امت" کے نقصان کی قیمت پر"اپنی" حق پرستی اور توکُل على اللہ کا ثبوت دینا۔ مختصراً، گوشۂ عافیت اختیار کرنے کا یہ دوسرا نام ہے۔

دوسری انتہا: "اصل" سے ایسا خروج، کہ "اسثناء" ہی کا ہو رہنا۔ یہ ہمارے  کیس کی آفیشل موت ہوتی ہے، اگرچہ لوگ ہمیں برسرِ عمل دیکھیں۔ "ضرورات" وغیرہ کا وہ پورا مبحث جو "کبھی" اس اجتہاد کی بنیاد بنا ہو گا ظاہر ہے اس کے ساتھ ہی دفن ہو چکا ہوتا ہے۔ سو "اجتہاد" ماننا بھی اس کو، اب ایک فارمیلٹی کہیے؛ کچھ غیر معمولی اہتمام اس لفظ کا رہے تو شاید اس وجہ سے کہ زمانہ "اجتہاد" کا ہے! (ایک ایسا دور جہاں "اجتہاد" کا رُعب "نص" سے بڑھ کر ہے!)

مراسلہ نگار سے اصولی اتفاق کر آنے والے ایک شخص کے متعلق اندیشہ چونکہ پہلی انتہا کا شکار ہونے کا نہیں، بلکہ دوسری انتہا کی نذر ہو جانے کا ہے، لہٰذا اس پر مزید ابھی مجھے کچھ بات کرنی ہے، تھوڑا آگے چل کر۔

جبکہ وسط: اصل کو اصل اور اسثناء کو استثناء ہی رکھنا۔ نظریاتی، وجدانی، تعلیمی، ابلاغی، ہر سطح پر۔ (جوکہ تحریکوں کی زندگی میں ٹھیک ٹھاک محنت کا ضرورت مند رہتا ہے)، تاکہ "اصل سے خروج" کےلیے "اضطرار" کا صحیح و شرعی معنیٰ ہی قلوب کے اندر پیوست رہے۔ آپ کو معلوم ہے دین کو اس کی حقیقت پر قائم رکھنا اور کوئی ایک انچ اس میں فرق اور تفرقہ نہ آنے دینا (أنْ أَقِیْمُو الدِّیْنَ وَلَا تَتَفَرَّقُوْا فِیْہِ) قرآنی تعبیر "اقامتِ دین" کا معنیٰ دینے میں قوی تر ہے بنسبت دین کو نافذ کرنے وغیرہ ایسا معنیٰ دینے کے۔

نوٹ: "ضرورة" اور "اضطرار" ہمارے اِس پورے مبحث میں ایک ہی شے ہے۔

پچھلی قسط: مقدمہ، ابن تیمیہؒ کی ایک تأصیل سے                                      اگلی قسط: جمہوری پیکیج، "کمتر برائی"… یا "آئیڈیل"؟

مضمون: خلافتِ نبوت سے عدولی، ملوکیتی ادوار پر جمہوری فارمیٹ کا قیاس

پہلی قسط: مقدمہ، ابن تیمیہؒ کی ایک تأصیل سے

دوسری قسط: جمہوری راستہ اختیار کرنے پر، دینداروں کے یہاں دو انتہائیں

تیسری قسط: جمہوری پیکیج، "کمتر برائی"… یا "آئیڈیل"؟

چوتھی قسط: جمہوریت… اور اسلام کی تفسیرِ نو

پانچویں قسط: جمہوریت کو "کلمہ" پڑھانا کیا ضروری ہے؟

چھٹی قسط: جمہوری راستہ… اور اسلامی انقلاب

ساتویں قسط: "اقتدار" سے بھی بڑھ کر فی الحال ہمارے پریشان ہونے کی چیز

آٹھویں قسط: دینداروں کے معاشرے میں آگے بڑھنے کو، جمہوریت واحد راستہ نہیں


Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
ديگر آرٹیکلز
تنقیحات-
احوال-
حامد كمال الدين
کل جس طرح آپ نے فیصل آباد کے ایک مرحوم کا یوم وفات "منایا"! حامد کمال الدین قارئین کو شاید ا۔۔۔
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
’بندے‘ کو غیر متعلقہ رکھنا آپ کے "شاٹ" کو زوردار بناتا! حامد کمال الدین لبرلز کے ساتھ اپنے ا۔۔۔
بازيافت- سلف و مشاہير
حامد كمال الدين
"حُسینٌ منی & الحسن والحسین سیدا شباب أھل الجنة" صحیح احادیث ہیں؛ ان پر ہمارا ایمان ہے حامد۔۔۔
بازيافت- تاريخ
بازيافت- سيرت
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
ہجری، مصطفوی… گرچہ بت "ہوں" جماعت کی آستینوں میں! حامد کمال الدین ہجرتِ مصطفیﷺ کا 1443و۔۔۔
جہاد- مزاحمت
جہاد- قتال
حامد كمال الدين
صلیبی قبضہ کار کے خلاف چلی آتی ایک مزاحمتی تحریک کے ضمن میں حامد کمال الدین >>دنیا آپ۔۔۔
احوال-
Featured-
حامد كمال الدين
مضمون کا پہلا حصہ پڑھنے کےلیے یہاں کلک کیجیےمزاحمتوں کی تاریخ میں کونسی بات نئی ہے؟ صلیبی قبضہ کار کے خلاف۔۔۔
حامد كمال الدين
8 دینداروں کے معاشرے میں آگے بڑھنے کو، جمہوریت واحد راستہ نہیں تحریر: حامد کمال الدین ۔۔۔
حامد كمال الدين
7 "اقتدار" سے بھی بڑھ کر فی الحال ہمارے پریشان ہونے کی چیز تحریر: حامد کمال الدین مض۔۔۔
حامد كمال الدين
6 جمہوری راستہ… اور اسلامی انقلاب تحریر: حامد کمال الدین مضمون: خلافتِ نبوت سے۔۔۔
حامد كمال الدين
5 جمہوریت کو "کلمہ" پڑھانا کیا ضروری ہے؟ تحریر: حامد کمال الدین مضمون: خلافتِ ۔۔۔
حامد كمال الدين
4 جمہوریت… اور اسلام کی تفسیرِ نو تحریر: حامد کمال الدین مضمون: خلافتِ نبوت سے۔۔۔
حامد كمال الدين
3 جمہوری پیکیج، "کمتر برائی"… یا "آئیڈیل"؟ تحریر: حامد کمال الدین مضمون: خلافتِ نبوت سے عد۔۔۔
حامد كمال الدين
2 جمہوری راستہ اختیار کرنے پر، دینداروں کے یہاں دو انتہائیں تحریر: حامد کمال الدین ۔۔۔
حامد كمال الدين
1 کامل خلافتِ نبوت سے عدولی، ملوکیتی ادوار پر جمہوری فارمیٹ کا قیاس؟ تحریر: حامد ک۔۔۔
حامد كمال الدين
جاہلیت کے سب دستور آج میرے پیر کے نیچے! تحریر: حامد کمال الدین  خطبۂ حجة الوداع، جس کی باز۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
"نفس کی اطاعت" شرک کب بنتی ہے؟ حامد کمال الدین برصغیر کے فکری رجحانات صوفیت کے زیرِاثر رہے۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
ایک "عقیدہ بیسڈ" aqeedah-based بیانیہ جو "اعمال" میں نرمی اور تدریج پر کھڑا ہو حامد ک۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
"دلیل ازم" کا ایک ٹپیکل مغالطہ حامد کمال الدین سوال: کیا آپ اس عبارت سے متفق ہیں؟ [ر۔۔۔
کیٹیگری
Featured
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
منہج
حامد كمال الدين
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
سلف و مشاہير
حامد كمال الدين
تاريخ
حامد كمال الدين
سيرت
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
باطل
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
فرقے
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
خواتين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
جہاد
قتال
حامد كمال الدين
مزاحمت
حامد كمال الدين
مزاحمت
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز