عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Tuesday, April 13,2021 | 1442, رَمَضان 0
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت
:عنوان

:کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت

حامد کمال الدین

اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقراء کہہ لیں

واقعہ اب تک کا یہی ہے کہ جمہوری احاطہ میں قدم رکھنے والا ہر مسلم ذہن تھوڑی دیر میں جمہوری قدروں
(فی الحقیقت ڈیموکریٹک عقائد) کو انٹرنلائز کرنے لگا،
آخر وہ بے ساختہ اس کے اندر بولنے لگیں۔
اس میں کوئی اسثناء کم از کم میرے ذہن میں نہیں۔

اس استقراء کا دوسرا حصہ البتہ یہ ہے کہ اس (جمہوری) احاطہ میں قدم رکھنے سے پیشتر،
ایسے کسی مسلم ذہن کا،
دور حاضر کے اِس جمہوری (فی الحقیقت ہیومنسٹ) پیراڈائم کو توحید کے ٹھیٹ اوزاروں سے رد کر چکا ہونا بھی پایہ ثبوت کو نہیں پہنچتا۔
اس میں کسی قدر کوئی استثناء میرے ذہن میں ہے تو وہ امام مودودیؒ کا دورِ اول ہے۔
لیکن کتبِ عقیدہ کی تراث کو پڑھ چکے ایک شخص کو اس میں بھی جو ایک جھول دکھائی دیتا ہے وہ ہے ڈیموکریسی وغیرہ کو ’’عقیدہ‘‘ والی جہت سے دیکھنے پر ’’نظام‘‘ والی جہت سے دیکھنے کا غالب آیا رہنا۔
چنانچہ فوکس کا مسئلہ تب بھی زیادہ ’’شمولیت‘‘ کا تھا اور سید مودودیؒ کی بہت ساری (اور بڑی بڑی سخت) گفتگو ڈیموکریسی پر ’’شمولیت‘‘ ہی سے متعلقہ سوالات اور بحثوں کے پس منظر میں ہوئی۔
خاص ایک ’’عقیدہ‘‘ کی تقریر کرنا اور وہ بھی اپنے روایتی اسلامی عقائدی ڈسکورس کا تسسلسل بنا کر،
یہاں بہت کم دیکھنے میں آیا۔
خاصی طبعی بات تھی کہ ’’شمولیت‘‘ جائز ہو جانے کے وقت ڈیموکریسی کی "اسلامائزیشن" کا عمل بھی ذہنوں کے اندر ساتھ ہی شروع ہو جاتا،
کیونکہ مسئلہ کی ’’عقائدی‘‘ ترسیخ اس سے پہلے بھی اذہان میں غیر موجود ہی تھی۔
ایک "عقیدہ" کے ساتھ آپ کی جنگ بہر حالت جاری رہے گی۔
البتہ ’’نظام‘‘ کے ساتھ مسئلہ بڑی حد تک شمولیت اور عدم شمولیت کا رہے گا،
پھر جب وہ ’’شمولیت‘‘ میں سمٹ آئے تو اُس اباء defiance کو بھی،
جو کبھی ’’عدم شمولیت‘‘ کے وقت تھی،
ایک بے محل اور آؤٹ ڈیٹڈ outdated بحث ہو کر رہ جانا ہوتا ہے۔
اس لحاظ سے،
میں اس کو بھی ’’استثناء‘‘ ماننے کے لیے تیار نہیں،
گو اس اتنی سی چیز کو بھی قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہوں۔

اس دوسرے نکتے کا لب لباب یہ کہ:
ایک ٹوٹنے والی چیز کا "ضرب" نہ لگنے تک بچا رہنا صرف اس "ضرب" کی تفسیر نہیں چاہتا بلکہ ٹوٹنے سے پہلے کی اپنی اس "حالت" پر بھی آپ کی نظر چاہے گا۔
معاملے کی پوری تفسیر تبھی ہو سکے گی۔

تو پھر اب تک کا یہ ایک (ناقص) استقراء یوں ٹھہرا،
اللہ اعلم،
کہ:

1۔ اس نمک کی کان میں جو گیا نمک بنا۔

2۔ "کان" میں جانے سے پہلے،
اُس کے ساتھ ایک جوہری مقاومت (immune, resistance) پیدا کر رکھنے کی کوئی زبردست استعداد یا اس کے شواہد بھی البتہ اس کے ہاں نہیں دیکھے گئے تھے۔
یعنی وہ ’’نمک‘‘ بن جانے کے لیے "عُرضة" prone ایک لحاظ سے پہلے سے ہی تھا۔
بالفاظِ دیگر،
ایسا ہونا ہی تھا!
بلکہ ایسا نہ ہوتا تو باعثِ تعجب تھا؛
کیونکہ ایک ’’نظریاتی جہانی سٹیٹس کو‘‘ کے خلاف ذہنی مزاحمت پیدا کر رکھنا ایک غیر معمولی عقائدی ترسیخ چاہتا تھا،
اس کے بغیر اُس کوچے کا رخ کرنا اپنا آپ ہار دینے کے مترادف ہی ہوتا۔
آئندہ بھی اس نمک کی کان میں مسلم جماعتوں کے نمک بننے کے بکثرت واقعات ہوں تو نہ صرف اس پر تعجب نہ ہونا چاہئے بلکہ اس کا سبب بھی سب سے زیادہ اسی پوائنٹ پر پایا جانے کا امکان ہو گا۔
والعلم عند اللہ

ایک بہت بڑی ضرورت اس وقت میری نظر میں ہیومنزم والے شرک کے تار و پود کو قلوب کی سر زمین سے اکھاڑنا ہے،
خالص عقائدی بنیادوں پر۔
اور شرک و توحید کا وہی محمد بن عبدالوھابؒ والی بنیادوں پر ایک ٹھیٹ ڈائلیکٹ اٹھانا۔
’’تربیت‘‘ کا یہ ایک بنیادی و لازمی حصہ ہو گا۔
اس کے بغیر آپ کا صرف یہاں کے سیاسی نہیں تعلیمی و انتظامی اداروں تک کا رخ کرنا گھاٹے کا سودا ثابت ہو گا۔
جبکہ گھر بیٹھنا یا اپنے تنظیمی مراکز اور دفاتر میں ’محفوظ‘ بیٹھے رہنا اور خوش ہونا کہ ہمارا تو یہ ماڈرنزم کوئی نقصان نہ کر پایا،
کسی دعوت یا تحریک کے حق میں ’’آپشن‘‘ تک نہیں کہلائے گا۔

ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت کا میرے خیال میں کوئی متبادل نہیں

اور ہاں اس کا مطلب ہر بندے کو فلسفی بنانا اور کانٹ اور ہیگل کے نام رٹوانا نہیں،
بلکہ ’’عقیدۂ اسلام‘‘ کی ایک سادہ تلقین۔
اس کی کچھ توضیح کسی اور وقت کی جائے گی،
ان شاء اللہ
Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
ديگر آرٹیکلز
Featured-
احوال- تبصرہ و تجزیہ
راہنمائى-
حامد كمال الدين
کسی کی "نیت" اور "اخلاص" کا ثبوت آنے تک! === میڈیا سٹریٹجی کے چند مختصر مباحث  2 حامد کمال۔۔۔
راہنمائى-
Featured-
حامد كمال الدين
ایک "اِبلاغی چابکدستی" ہم پر حرام نہیں ہے! حامد کمال الدین دین پسندوں کی "میڈیا سٹرٹیجی" کے تعلق سے،۔۔۔
حامد كمال الدين
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت حامد کمال الدین اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقراء کہہ لیں واقعہ اب ۔۔۔
صالحہ نور
میانمار سوچی اور مکافات عمل کی چکی.......................... صالحہ نور میانمار میں فوجی انقلاب کے بعد۔۔۔
Featured-
جہاد- دعوت
حامد كمال الدين
نظریۂ انقلاب پر ایک نظرثانی کی ضرورت حامد کمال الدین   زیر نظر تحریر ’’نظریۂ۔۔۔
ادارہ
  ’ریاست کے شہریوں’ کو بھی بےشک ہر قسم کا بزنس ۔۔۔
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
Featured-
حامد كمال الدين
لبرل معاشروں میں "ریپ" ایک شور مچانے کی چیز نہ کہ ختم کرنے کی حامد کمال الدین بنتِ حوّا کی ع۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
خلافتِ راشدہ کے بعد کے اسلامی ادوار، متوازن سوچ کی ضرورت حامد کمال الدین مثالی صرف خلافت۔۔۔
راہنمائى-
حامد كمال الدين
عاشوراء کا روزہ   فقہ اکیلےدسویں محرم کا روزہ رکھنا (نویں کا ساتھ نہ ملانا) بالکل جائ۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
ترک حکمران پارٹی سے وابستہ "اسلامی" توقعات اور واقعیت پسندی حامد کمال الدین ذیل میں میری ۔۔۔
احوال- وقائع
باطل- فرقے
حامد كمال الدين
شام میں حضرت عمر بن عبدالعزیزؒ کے مدفن کی بےحرمتی کا افسوسناک واقعہ اغلباً صحیح ہے حامد کمال الد۔۔۔
جہاد- دعوت
عرفان شكور
كامياب داعيوں كا منہج از :ڈاكٹرمحمد بن ابراہيم الحمد جامعہ قصيم (سعودى عرب) ضرورى نہيں۔۔۔۔ ·   ضرور۔۔۔
باطل- فرقے
ديگر
حامد كمال الدين
"المورد".. ایک متوازی دین حامد کمال الدین اصحاب المورد کے ہاں "کتاب" سے اگر عین وہ مراد نہیں۔۔۔
جہاد-
احوال-
حامد كمال الدين
’دوحہ‘ اہل اسلام کی ’جنیوا‘ سے بڑی جیت، ان شاء اللہ حامد کمال الدین ہمیں ’’زیادہ خوش نہ ہونے۔۔۔
جہاد- تحريك
تنقیحات-
حامد كمال الدين
اسلامی تحریک کا ’’مابعد تنظیمات‘‘ عہد؟ Post-organizations Era of the Islamic Movement یہ عن۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
باطل فرقوں کےلیے گنجائش پیدا کرواتے، دانش کے کچھ مغالطے   کچھ علمی چیزیں مانند (’’لازم المذھب لیس بمذھب‘۔۔۔
باطل- فرقے
حامد كمال الدين
شیعہ سٹوڈنٹ کے ساتھ دوستی، شادی بیاہ   سوال: السلام علیکم سر۔ یونیورسٹی میں ا۔۔۔
بازيافت- سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
امارتِ حضرت معاویہؓ، مابین خلافت و ملوکیت نوٹ: تحریر کا عنوان ہمارا دیا ہوا ہے۔ از کلام ابن ت۔۔۔
کیٹیگری
Featured
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
تبصرہ و تجزیہ
حامد كمال الدين
وقائع
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
منہج
حامد كمال الدين
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
باطل
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
فرقے
حامد كمال الدين
فرقےديگر
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
خواتين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
جہاد
دعوت
حامد كمال الدين
دعوت
عرفان شكور
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز