عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Tuesday, November 19,2019 | 1441, رَبيع الأوّل 21
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
weekly آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات
:عنوان

امام احمدؒ سے پوچھا گیا: کس حدیث سے آپ یہ مسئلہ لیتے ہیں کہ تکبیر یوم عرفہ کی نماز فجر سے لے کر ایام تشریق کے آخری دن کی عصر تک ہے؟ فرمایا: اجماع سے

. راہنمائى :کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف

(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات

ابن قدامہ مقدسی رحمہ اللہ کے متن سے


(عربی متن اردو ترجمہ کے نیچے)

جہاں تک تعلق ہے اضحیٰ میں تکبیر کا، تو وہ دو طرز پر ہے: مطلق اور مقید۔

جہاں تک تعلق ہے مطلق کا، تو وہ ہے تمام اوقات میں تکبیر کہہ لینا، عشرہ ذوالحج کے شروع سے لے کر ایام تشریق کے آخری دن تک۔

اور جہاں تک تعلق ہے مقیَّد کا تو وہ ہے (خاص) نمازوں کے بعد تکبیر کہنا، یوم عرفہ کی نمازِ صبح سے لے کر ایام تشریق کے آخری دن کی عصر تک۔

امام احمدؒ سے پوچھا گیا: کس حدیث سے آپ یہ مسئلہ لیتے ہیں کہ تکبیر یوم عرفہ کی نماز فجر سے لے کر ایام تشریق کے آخری دن کی عصر تک ہے؟ فرمایا: اجماع سے جو حضراتِ عمرؓ، علی، ابن عباس اور ابن مسعود رضی اللہ عنہم سے آتا ہے۔ اور جابرؓ سے مروی ہے کہ نبیﷺ نے یومِ عرفہ کو صبح کی نماز پڑھی، پھر ہماری طرف رخ فرمایا اور کہنے لگے: اللہ أکبر، اور پھر آپﷺ تکبیر کو ایامِ تشریق کے آخر تک لے گئے۔

مشروع تکبیر یوں کہی جائے گی: (الله أكبر، الله أكبر، لا إله إلا الله والله أكبر، الله أكبر ولله الحمد)۔ اس لیے کہ یہ مروی ہے علی سے اور ابن مسعود سے، رضی اللہ عنھما۔ امام احمد فرماتے ہیں: میرا چناؤ ابن مسعودؓ والی تکبیر ہے، اور پھر امام صاحب نے یہ الفاظ بولے۔ نیز اس لیے کہ جابرؓ کی حدیث میں آیا کہ نبیﷺ نے دو بار اللہ أکبر کہا۔ نیز اس لیے کہ نماز سے باہر تکبیر ہے، لہٰذا جفت ہوئی، جیسے اذان کی تکبیر

فأما التكبير في الأضحى فهو على ضربين: مطلق ومقيد. فأما المطلق فالتكبير في جميع الأوقات، من أول العشر إلى آخر أيام التشريق. وأما المقيد فهو التكبير في أدبار الصلوات، من صلاة الصبح يوم عرفة إلى العصر من آخر أيام التشريق. قيل لأحمد: بأي حديث تذهب إلى أن التكبير في صلاة الفجر يوم عرفة إلى العصر من آخر أيام التشريق؟ قال: بالإجماع عن عمر وعلي وابن عباس وابن مسعود - رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُمْ -. وقد روي عن جابر «أن النبي - صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ - صلى الصبح يوم عرفة، ثم أقبل علينا فقال: الله أكبر ومد التكبير إلى آخر أيام التشريق» . وصفة التكبير المشروع: (الله أكبر، الله أكبر، لا إله إلا الله والله أكبر، الله أكبر ولله الحمد) ؛ لأن هذا يروى عن علي وابن مسعود - رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُمَا -. قال أبو عبد الله: اختياري تكبير ابن مسعود. وذكر مثل هذا، ولأن في حديث جابر «أن النبي - صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ - كبر تكبيرتين» ، ولأنه تكبير خارج الصلاة فكان شفعاً كتكبير الأذان.

فصل:
اور اس (تکبیرِ مقیَّد) کا وقت ہے فرض نمازوں کے اختتام پر۔ نوافل کے اختتام پر مشروع نہیں، کیونکہ نوافل کےلیے اذان نہیں ہے، سو نوافل کے اختتام پر تکبیر نہیں، جیسا نمازِ جنازہ کے بعد نہیں۔ اور اگر آدمی کچھ نماز گزر جانے کے بعد جماعت میں شامل ہوا تو جب وہ سلام پھیرے تکبیر کہے۔ ہاں اگر اس نے پوری نماز ہی اکیلے پڑھی ہے، تو اس میں دو روایتیں ہیں:

ایک: وہ تکبیر کہے، کیونکہ یہ ایک مشروع ذکر ہے، سو وہ دوسرے سلام کے مشابہ ہوا۔

دوسری روایت: تکبیر نہ کہے؛ اس لیے کہ ابن عمرؓ جب اکیلے (فرض) نماز پڑھتے تو تکبیر نہ کہتے۔ اور ابن مسعودؓ نے فرمایا: تکبیر تو بس اسی شخص پر ہے جو جماعت سے نماز پڑھے۔ نیز اس لیے کہ وہ ایک وقت کے ساتھ مخصوص ہے۔ سو جماعت کے ساتھ مخصوص ہوئی، جیسے خطبہ۔

اور مسافر تکبیر کے مسئلہ میں مقیم کی طرح ہے۔ اور عورت مرد کی طرح۔ بخاریؒ فرماتے ہیں: عورتیں ابان بن عثممان اور عمر بن عبد العزیز کے پیچھے مردوں کے ساتھ مل کر مسجد میں تکبیر کہا کرتی تھیں، اور وہ آواز نیچی رکھیں گی تا کہ مرد ان کی آواز نہ سنیں۔ امام احمد سے ایک روایت یہ کہ وہ تکبیر نہ کہے گی۔ اور جس آدمی کی کوئی نماز تکبیر کہنے کے ایام میں فوت ہوئی تو اس کی قضاء اگر اس نے تکبیر کے ایام کے اندر اندر ادا کی تو تکبیر کہے گا۔ اور ان ایام کے بعد قضاء ادا کی تو تکبیر نہیں کہے گا۔ اس لیے کہ تکبیر وقت کے ساتھ مقیَّد ہے۔

فصل:
وموضعه عقيب أدبار الصلوات المفروضات، ولا يشرع عقيب النوافل لأنه لا أذان لها فلم يكبر بعدها كصلاة الجنازة. وإن سبق الرجل ببعض الفريضة كبر إذا سلم. وإن صلاها كلها وحده ففيه روايتان:

إحداهما: يكبر لأنه ذكر مشروع للمسبوق فأشبه التسليمة

الثانية.

والثانية: لا يكبر؛ لأن ابن عمر كان لا يكبر إذا صلى وحده. وقال ابن مسعود: إنما التكبير على من صلى في الجماعة، ولأنه مخصوص بوقت فخص بالجماعة كالخطبة. والمسافر كالمقيم في التكبير، والمرأة كالرجل. قال البخاري: النساء كن يكبرن خلف أبان بن عثمان وعمر بن عبد العزيز مع الرجال في المسجد، ويخفضن أصواتهن حتى لا يسمعهن الرجال. وعن أحمد - رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ -: أنها لا تكبر. ومن فاتته صلاة في أيام التكبير فقضاها فيها كبر، وإن قضاها بعدها لم يكبر؛ لأن التكبير مقيد بالوقت.

فصل:

اور (مقیَّد) تکبیر وہ (فرض نماز سے فارغ ہو کر اسی پوزیشن میں) قبلہ رو کہے گا۔ اگر تکبیر کہنے سے پہلے وضوء ٹوٹ گیا تو تکبیر نہ کہے گا۔ کیونکہ وضوء ٹوٹنا نماز کا قاطع ہے۔ اگر تکبیر کہنا بھول گیا تھا تو قبلہ  رخ ہو گا اور تکبیر کہے گا، تاوقتیکہ مسجد سے نکل نہ گیا ہو۔

فصل:
ويكبر مستقبل القبلة، فإن أحدث قبل التكبير لم يكبر؛ لأن الحدث يقطع الصلاة. وإن نسي التكبير استقبل القبلة وكبر، ما لم يخرج من المسجد.

 

 

موفق الدين ابن قدامة المقدسی: الكافي في فقه الإمام أحمد۔ ص 343

Top of Form


Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز
احوال-
اصول- منہج
راہنمائى-
حامد كمال الدين
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز تحریر: حامد کمال الدین میری نظر میں، اس۔۔۔
کوٹ پینٹ پہننے کا شرعی حکم
راہنمائى-
حامد كمال الدين
کوٹ پینٹ پہننے کا شرعی حکم سوال: بہت سے مسلم ملکوں میں سوٹ کا رواج ہے، یعنی کوٹ پینٹ۔ جبکہ ۔۔۔
شریعت، بغیر مرضیِ عوام!؟
اصول- عقيدہ
راہنمائى-
ابن علی
44 شریعت، بغیر مرضیِ عوام!؟ شیخ لطف۔۔۔
اذانِ عثمانی كی مشروعیت
راہنمائى-
تنقیحات-
محمد زکریا خان
  ­اذانِ عثمانی كی مشروعیت جمع و ترتيب: محمد زكريا خان ادارتی نوٹ:&۔۔۔
دین و دنیا.. اور ’نظام‘ کی بحث
تنقیحات-
راہنمائى-
حامد كمال الدين
دین و دنیا.. اور ’نظام‘ کی بحث یہ میں مانتا ہوں کہ زندگی کے ہنگاموں میں شریک رہتے ہوئے دین اور ا۔۔۔
’نظام‘ کی بحث.. متنبہ رہنے کی بات بس ایک ہے
راہنمائى-
تنقیحات-
حامد كمال الدين
’نظام‘ کی بحث.. متنبہ رہنے کی بات بس ایک ہے وقت کے ایک رائج سیاسی نظام میں حصہ لینے کے حوالہ سے ۔۔۔
معاشرتی فرنٹ کی تحریکوں خصوصاً جماعتِ اسلامی کی خدمت میں
راہنمائى-
حامد كمال الدين
معاشرتی فرنٹ کی تحریکوں خصوصاً جماعتِ اسلامی کی خدمت میں ۔۔۔
عورت کا اعتکاف گھر میں یا مسجد میں؟
راہنمائى-
حامد كمال الدين
سوال: عورت کے اعتکاف کے بارے میں راہنمائی کریں۔  کیا آج کے زمانے میں وہ گھر پر اعتکاف کر سکتی ہیں؟ ۔۔۔
نفلی نماز، غیر عربی میں دعاء کر لینا
راہنمائى-
حامد كمال الدين
سوال: کیا ہم سجدے میں کوئی بھی دعاء کر سکتے ہیں؟ میرا مطلب ہے، اپنی زبان میں۔ )(سائل: اصغر خان) جواب: جی ۔۔۔
ديگر آرٹیکلز
بازيافت- سلف و مشاہير
Featured-
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
امارتِ حضرت معاویہؓ، مابین خلافت و ملوکیت نوٹ: تحریر کا عنوان ہمارا دیا ہوا ہے۔ از کلام ابن ت۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
سنت کے ساتھ بدعت کا ایک گونہ خلط... اور "فقہِ موازنات" حامد کمال الدین مغرب کے اٹھائے ہوئے ا۔۔۔
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
Featured-
حامد كمال الدين
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ! حامد کمال الدین دین میں طعن کر لو، جیسے مرضی دین کے ثوابت ۔۔۔
Featured-
بازيافت-
حامد كمال الدين
تاریخِ خلفاء سے متعلق نزاعات.. اور مدرسہ اہل الأثر حامد کمال الدین "تاریخِ خلفاء" کے تعلق س۔۔۔
Featured-
باطل- اديان
حامد كمال الدين
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ حامد کمال الدین اعتراض: اسلامی۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
لفظ  "شریعت" اور "فقہ" ہم استعمال interchangeable    ہو سکتے ہیں ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
ماتریدی-سلفی نزاع، یہاں کے مسلمانوں کو ایک نئی آزمائش میں ڈالنا حامد کمال الدین ایک اشع۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
منہجِ سلف کے احیاء کی تحریک میں ’مارٹن لوتھر‘ تلاش کرنا! حامد کمال الدین کیا کوئی وجہ ہے کہ۔۔۔
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
      کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت حامد ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
مشكوة وحى- علوم حديث
حامد كمال الدين
اناڑی ہاتھ درایت! صحیح مسلم کی ایک حدیث پر اٹھائے گئے اشکال کے ضمن میں حامد کمال الدین ۔۔۔
راہنمائى-
حامد كمال الدين
(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات ابن قدامہ مقدسی رحمہ اللہ کے متن سے۔۔۔
تنقیحات-
ثقافت- معاشرہ
حامد كمال الدين
کافروں سے مختلف نظر آنے کا مسئلہ، دار الکفر، ابن تیمیہ اور اپنے جدت پسند حامد کمال الدین دا۔۔۔
اصول- منہج
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
اصول- عقيدہ
حامد كمال الدين
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت حامد کمال الدین اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقر۔۔۔
ثقافت- خواتين
ثقافت-
حامد كمال الدين
"دردِ وفا".. ناول سے اقداری مسائل تک حامد کمال الدین کوئی پچیس تیس سال بعد ناول نام کی چیز ہاتھ لگی۔ وہ۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ حامد کمال الدین شاہ سلمان کے شروع دنوں میں ی۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی حامد کمال الدین وہ طعنے جو میرے کچھ مخلص بھائی او۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت! حامد کمال الدین ظالمو! نہ صرف یہاں کا منبر و محراب ۔۔۔
احوال-
ادارہ
تحریر:   تحریم افروز یوں تو امریکا سے مسلمانوں  کے معاملے میں کبھی خیر کی توقع رہی ہی&۔۔۔
کیٹیگری
Featured
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
باطل
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
اديان
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز