عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Friday, November 16,2018 | 1440, رَبيع الأوّل 7
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
weekly آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
زیادتی زیادتی میں فرق ہے
:عنوان

کیا اس معترض نے سوچا ہےکہ وہ کتنا بڑا فرق کر رہا ہے ایک جانب ’ایران و روس‘ اور دوسری جانب’ترکی و سعودیہ‘ کےمابین؟ یعنی وہ روس و ایران کا شام میں جانا زیادتی مان رہا ہےاور ترکی و سعودیہ کا شام میں نہ جانا زیادتی

. باطلفرقے . احوالوقائع :کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف


حامد کمال الدین

ایک بڑی خلقت واضح واضح اشیاء میں بھی فرق کرنے کی روادار نہیں۔ مگر تعجب ہوتا ہے جب سمجھداروں سے یہ چیز دیکھنے کو ملے۔

سوشل میڈیا میں ایک ٹرینڈ دیکھنے میں آ رہا ہے: اپنے اوپر ’اعتراض‘ کی گنجائش نہ چھوڑنے کی ذہنیت، اور اس مقصد کےلیے سویپنگ سٹیٹمنٹس  sweeping statements   دینا۔ کسی مسئلہ یا بحران سے متعلقہ سب فریقوں کو ’’برابر کا قصوروار‘‘ دے کر مطئمن ہونا کہ اب اعتراض کر کے بتاؤ؛ میں نے تو کسی کو چھوڑا ہی نہیں! حالانکہ اگر یہ فرض کر بھی لیا جائے کہ ایک مسئلہ میں سارے فریق قصوروار ہیں تو بھی یہ دقتِ نظر درکار رہے گی کہ کس فریق کی زیادتی ایک معاملہ میں کس درجے اور نوعیت کی ہے۔

اب مثلاً...  شام میں جاری نہتے شہریوں کے قتل عام کے سلسلہ میں آپ نے روس اور ایران کی نہایت واضح، سفاک ruthless اور متعمَّد deliberate جارحیت کا ذکر کیا تو ظاہر ہے چونکہ ایران کے اس خونین چہرے کو چھپانا ممکن نہیں تو ایک چالاک ذہن نے اس پر یوں کیا کہ وہی خون اٹھا جھٹ سے ترکی اور سعودیہ کے چہرے پر بھی لیپ دیا! وہ تو بلاشبہ ایک خرانٹ ذہن ہے اور بالعموم ایک رافضی اور لبرل حربہ ہے۔ لیکن ایک سادہ لوح ذہن ہمارے یہاں (دینی سُنی حلقوں میں) بھی ہے جو اپنے تئیں ’انصاف‘ کے تقاضوں کو ملحوظ رکھتے ہوئے شام کے نہتے شہریوں پر ہونے والی بمباری کے سسلسلہ میں ’ایران اور روس کے ساتھ ساتھ‘ ترکی اور سعودیہ کو بھی ’برابر کا ذمہ دار‘ ٹھہرا کر داد طلب نگاہوں سے ہماری طرف دیکھے گا! بلکہ خاموش سرزنش بھی کہ ارے ترکی اور سعودیہ کو بھول گئے! اور کچھ تو ما شاء اللہ پاکستان تک کو فہرست میں شامل کر کے ’انصاف‘ کا تقاضا پورا کریں گے! اس رویے کا سب سے بڑا نقصان یہ ہے کہ وہ صاف دندناتا ظالم جو شام میں بستیوں کی بستیاں بھسم کر رہا ہے نگاہوں سے اوجھل ہو جاتا ہے اور ہم کچھ بےکار بحثوں میں الجھ جاتے ہیں بلکہ کسی وقت تو ’اخوانی اور سلفی‘ کے ڈائلیکٹ میں پڑ جاتے ہیں۔ کیا ظالم کی اس سے بڑھ کر مدد اس موقع پر کوئی ہو سکتی ہے؟

اب اس شام کی مثال کو ہی لے لیجئے اور تھوڑی دیر کےلیے یہ بھی مان لیجئے کہ یہ سارے ہی ملک اس معاملہ میں کسی نہ کسی معنیٰ کے قصوروار ہیں۔ تو بھی یہ دیکھنا باقی ہے کہ شام کا وہ قصاب ڈکٹیٹر جس نے تیس تیس چالیس چالیس ہزار انسان ایک ایک ہلے میں لقمۂ اجل کیے اور خالی احتجاج کرتی نہتی شہری بستیوں پر ٹینک چڑھائے، یہاں وہ ’’بیرونی قوتیں‘‘ کونسی ہیں جو اس خونیں قصاب ڈکٹیٹر کے ساتھ آ کر کھڑی ہیں اور اُس کے شانہ بشانہ یہاں کی نہتی شامی بسیتوں پر پوری بےرحمی کے ساتھ آتش و آہن برسا رہی ہیں؟ اور اس ظالم کے ساتھ کھڑی قوتوں کے مقابلے پر وہ کونسی ’’بیرونی قوتیں‘‘ ہیں جو، عملاً، یا زبانی کلامی، شام کے ان مظلوم شہریوں کی تائید میں کھڑی ہیں جو ان ٹینکوں اور طیاروں کی آتشیں بارش سہہ رہے ہیں؟ لیکن نہیں۔ وہ شخص بھی برابر جو قصاب کے ساتھ کھڑا ہے اور وہ بھی برابر جو اس قصاب کے ہاتھوں ذبح ہونے والے مظلوم کے ساتھ کھڑا ہے! یہ ’رنجیت سنگھ والا انصاف‘ بدقسمتی سے سوشل میڈیا کی ایک بڑی تعداد کے ہاں آج ایک ٹرینڈ بن گیا ہوا ہے۔

معاملے کو دیکھنے کی ایک سطح تو یہ ہے جو ابھی ذکر ہوئی۔ یعنی دیکھیے تو یہ کہ کون ظالم کے ساتھ کھڑا ہے اور کون مظلوم کے ساتھ۔

اب ایک دوسری سطح پر آ جائیے۔ ایک طبقہ ترکی اور سعودیہ کو (بلکہ ساتھ شاید پاکستان کو بھی) اس وجہ سے ایران کے مقابلے پر ’برابر کا ذمہ دار‘ ٹھہرا رہا ہے کہ یہ شام میں اہل سنت عوام کی مدد کو کیوں نہیں جا رہے۔ اب قطع نظر اس بات سے کہ ان میں سے کوئی ملک اس معاملہ میں کہاں تک بےبس ہے اور کہاں تک وہ جان بوجھ کر اپنے بھائیوں کی مدد سے پہلوتہی کر رہا ہے، تھوڑی دیر کےلیے ہم فرض کر لیتے ہیں کہ یہ سارے سُنی ملک اپنے شامی بھائیوں کےلیے جو کرنے کی پوزیشن میں ہیں یہ وہ بھی نہیں کر رہے۔ اور ایک درجے میں یہ یقیناً واقعہ بھی ہے۔ اب اس لحاظ سے ہم اگرچہ یہ کہہ سکیں گے کہ یہ ملک (ترکی، سعودیہ، پاکستان وغیرہ) اپنے شامی بھائیوں کے حق میں قصوروار ہیں۔ لیکن سوال اور سیاق تو یہ ہے کہ کیا ایران کی ٹکر کے قصوروار؟ یعنی جیسا وحشیانہ جرم اِس وقت شام کی شہری بستیوں کو خون میں لت پت کرتے روس اور ایران کا، عین ویسا ہی وحشیانہ جرم ’شام کو خون میں نہلاتے‘ ترکی، سعودی عرب اور پاکستان کا؟ اصل سوال تو سیاق کا ہے۔ ہاں اس سیاق سے آپ نکل آئیے تو اس بات کو زیر بحث لانے میں کیا حرج ہے کہ اس وقت جب شام میں روس اور ایران ایسے بھیڑیے گھس آئے تھے، ہمارے یہ سنی ممالک اپنے شامی بھائیوں کی مدد کےلیے کیا کر سکتے تھے جو یہ نہیں کر رہے اور جس کی بنا پر یہ امت کے ہاں قصوروار ہیں؟ پس اس پہلو سے بھی (اگر واقعتاً کوئی اسی سیاق میں بات کرتا ہے) کیا اس نے سوچا ہے کہ وہ کتنا بڑا فرق کر رہا ہے ایک جانب ’ایران و روس‘ اور دوسری جانب ’ترکی و سعودیہ‘ کے مابین؟ یہاں؛ روس اور ایران کا شام میں جانا زیادتی ٹھہرے گا اور ترکی و سعودیہ کا شام میں نہ جانا زیادتی ٹھہرے گا۔ اندازہ کر لیجئے کتنا بڑا فرق نکل آیا دونوں فریقوں کے مابین۔ (دوبارہ، یہ ہم ان حضرات کے ساتھ بات کر رہے ہیں جن کا شکوہ ترکی اور سعودیہ سے بالکل یہی ہے کہ یہ شام میں کچھ کر کیوں نہیں رہے۔ دوسرے حضرات یہاں ہمارے ساتھ الجھنے کی زحمت نہ فرمائیں)۔ لیکن تعجب تو یہ ہے کہ یہ فریق بھی روس اور ایران کے شامی خون میں ہاتھ رنگے (ایرانی و روسی) کردار کو پس منظر میں لے جانے کی اس مہم میں نادانستہ شریک ہو جاتا ہے اور ترکی و سعودیہ کی بابت اپنے دل کے پھپھولے پھول کر (جن میں یہ کسی درجہ حق بجانب بھی ہو سکتا ہے) اس شاطر لبرل و رافضی لابی کے ایجنڈا کی تقویت کا سبب بن جاتا ہے۔ کیا اس موقع پر ہم ایسا وکیل کرنے کے متحمل ہیں؟ شام کو لاشوں کا ڈھیر بنانے والا ڈکٹیٹر اور اس کے برہنہ مددگار آپ کی ان بےکار بحثوں میں چھُپ جائیں، کیا یہ ہے میڈیا کی جنگ لڑنا؟ شامی بھائیوں کےلیے ایک ’’آواز‘‘ اٹھانا ہی تو یہاں دور بیٹھے آپ کے بس میں تھا، اس میں بھی آپ بشار و روس و ایران ایسے قاتل جتھے کی ہی جان چھڑوانے کا ذریعہ بن رہے ہوں؛ اور کوئی خرانٹ ذہن آپ سے یہ سہولت دھڑادھڑ لے رہا ہو!؟ ’ترکی و سعودیہ‘ کے ساتھ بغض اگر کوئی نیکی ہے تو بھی اس کی کوئی حد ہونی چاہئے، دوستو۔


Print Article
  غوطہ
  سعودیہ
  ترکی
  روس
  بشار
  ایران
  شام
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
کچھ مسلم معترضینِ اسلام!
Featured-
باطل- جدال
حامد كمال الدين
کچھ ’مسلم‘ معترضینِ اسلام! تحریر: حامد کمال الدین پچھلے دنوں ایک ٹویٹ میرے یہاں سے  ہو۔۔۔
طیب اردگان امیر المؤمنین نہیں ہیں، غلط توقعات وابستہ نہ رکھیں۔
احوال- امت اسلام
ذيشان وڑائچ
ہمارے کچھ نوجوان طیب اردگان کے بارے میں عجیب و غریب الجھن کے شکار ہیں۔ کوئی پوچھ رہا ہے کہ۔۔۔
’’سلفیوں‘‘ کے ساتھ تھوڑی زیادتی ہو رہی ہے!
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
’’سلفیوں‘‘ کے ساتھ تھوڑی زیادتی ہو رہی ہے!    عرب داعی محترم ابو بصیر طرطوسی کے ساتھ بہت م۔۔۔
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز
احوال-
اصول- منہج
راہنمائى-
حامد كمال الدين
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز تحریر: حامد کمال الدین میری نظر میں، اس۔۔۔
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر
Featured-
ثقافت- خواتين
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر اجالا عثمان انٹرنیٹ سے لی گئی ایک تحریر جو ہمیں ا۔۔۔
غامدى اور عصر حاضر ميں قتال
باطل- فرقے
اعتزال
ادارہ
ایک فیس بکی بھائی نے غامدی صاحب کی جہاد کے موضوع پر ویڈیو کا ایک لنک دے کر درخواست کی تھی کہ میں اس ویڈیو کو ۔۔۔
دین پر کسی کا اجارہ نہ ہونا.. تحریف اور من مانی کےلیے لائسنس؟
باطل- كشمكش
حامد كمال الدين
تحریر: حامد کمال الدین کہتا ہے میں اوپن ایئر میں کیمروں کے آگے جنازے کی اگلی صف کے اندر ۔۔۔
اب اس کےلیے اہلِ دین آپس میں الجھیں!؟
احوال-
باطل- شخصيات و انجمنيں
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ’’تنگ نظری‘‘ کی ایک تعریف یہ ہو سکتی ہے کہ: ایک چیز جس کی دین میں گنجائش۔۔۔
کشمیر کےلیے چند کلمات
جہاد- مزاحمت
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
کشمیر کےلیے چند کلمات حامد کمال الدین برصغیر پاک و ہند میں ملتِ شرک کے ساتھ ہمارا ایک سٹرٹیجک معرکہ ۔۔۔
ديگر آرٹیکلز
Featured-
باطل- جدال
حامد كمال الدين
کچھ ’مسلم‘ معترضینِ اسلام! تحریر: حامد کمال الدین پچھلے دنوں ایک ٹویٹ میرے یہاں سے  ہو۔۔۔
اصول- منہج
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
پراپیگنڈہ وار propaganda war میں سیگ منٹیشن segmentation (جزء کاری) ناگزیر ہوتی ہے۔ یعنی معاملے کو ای۔۔۔
بازيافت-
ادارہ
ہجرت کے پندرہ سو سال بعد! حافظ یوسف سراج کون مانے؟ کسے یقیں آئے؟ وہ چار قدم تاریخِ ان۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
میرے اسلام پسندو! پوزیشنیں بانٹ کر کھیلو؛ اور چال لمبی تحریر: حامد کمال الدین یہ درست ہے کہ۔۔۔
احوال- امت اسلام
ذيشان وڑائچ
ہمارے کچھ نوجوان طیب اردگان کے بارے میں عجیب و غریب الجھن کے شکار ہیں۔ کوئی پوچھ رہا ہے کہ۔۔۔
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
’’سلفیوں‘‘ کے ساتھ تھوڑی زیادتی ہو رہی ہے!    عرب داعی محترم ابو بصیر طرطوسی کے ساتھ بہت م۔۔۔
اصول- عقيدہ
اداریہ-
حامد كمال الدين
شرکِ ’’ہیومن ازم‘‘ کی یلغار..  اور امت کا طائفہ منصورہ حالات کو سرسری انداز میں پڑھنا... واقعات م۔۔۔
احوال-
اصول- منہج
راہنمائى-
حامد كمال الدين
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز تحریر: حامد کمال الدین میری نظر میں، اس۔۔۔
Featured-
ثقافت- خواتين
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر اجالا عثمان انٹرنیٹ سے لی گئی ایک تحریر جو ہمیں ا۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
"نبوی منہج" سے متعلق ایک مغالطہ کا ازالہ حامد کمال الدین ایک تحریکی عمل سے متعلق "نبوی منہج۔۔۔
متفرق-
ادارہ
پطرس کے ’’کتے‘‘ کے بعد! تحریر: ابو بکر قدوسی مصنف کی اجازت کے بغیر شائع کی جانے والی ای۔۔۔
باطل- فرقے
اعتزال
ادارہ
ایک فیس بکی بھائی نے غامدی صاحب کی جہاد کے موضوع پر ویڈیو کا ایک لنک دے کر درخواست کی تھی کہ میں اس ویڈیو کو ۔۔۔
باطل- فرقے
احوال- وقائع
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ایک بڑی خلقت واضح واضح اشیاء میں بھی فرق کرنے کی روادار نہیں۔ مگر تعجب ہ۔۔۔
باطل- كشمكش
حامد كمال الدين
تحریر: حامد کمال الدین کہتا ہے میں اوپن ایئر میں کیمروں کے آگے جنازے کی اگلی صف کے اندر ۔۔۔
احوال-
باطل- شخصيات و انجمنيں
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ’’تنگ نظری‘‘ کی ایک تعریف یہ ہو سکتی ہے کہ: ایک چیز جس کی دین میں گنجائش۔۔۔
جہاد- مزاحمت
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
کشمیر کےلیے چند کلمات حامد کمال الدین برصغیر پاک و ہند میں ملتِ شرک کے ساتھ ہمارا ایک سٹرٹیجک معرکہ ۔۔۔
ثقافت- رواج و رجحانات
ذيشان وڑائچ
میرے ایک معزز دوست نے ویلینٹائن ڈے کے حوالے سے ایک پوسٹ پیش کی ہے۔ پوسٹ شروع ہوتی ہے اس جملے سے"ویلنٹائن ۔۔۔
بازيافت- تاريخ
ادارہ
علاء الدین خلجی اور رانی پدماوتی تحریر: محمد فہد  حارث دوست نے بتایا کہ بھارت نے ہندو۔۔۔
کیٹیگری
Featured
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
امت اسلام
ذيشان وڑائچ
امت اسلام
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
منہج
حامد كمال الدين
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
ادارہ
تاريخ
ادارہ
سلف و مشاہير
مہتاب عزيز
مزيد ۔۔۔
باطل
جدال
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فرقےاعتزال
ادارہ
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
خواتين
ادارہ
رواج و رجحانات
ذيشان وڑائچ
معاشرہ
عرفان شكور
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ابن علی
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
ادارہ
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز