عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Friday, November 16,2018 | 1440, رَبيع الأوّل 7
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
2013-04 apniJamhuriat آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
جمہوریت مشرف بہ اسلام!
:عنوان

ہم ان دفعات کو لے کر کہاں کہاں نہیں پھرے؟ کہا ں کہاں ان کے حوالے نہیں دیے؟ یہ دستور کے حوالے تھے۔ اب یہ کوئی ہماری بات تھوڑی تھی۔ ہم ان دفعات کے نمبر بتا سکتے تھے۔صفحات کی نشاندہی کرسکتے تھے۔

. باطل :کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف

فصل 9 کتابچہ: ’’اپنی جمہوریت یہ تو دنیا نہ آخرت‘‘

اس کہانی کا سب سے افسوسناک پہلویہ ہے کہ اس آفت کی – جس کا نام ڈیموکریسی ہے–  ہم نے ’’اسلام‘‘ کے ساتھ بھی مماثلتیں اور مشابہتیں تلاش کرنا شروع کردیں !

ضمیر کی خلش دور کرنے کےلئے ہم نے اس با ت کا سہارا لیا کہ یہ کوئی مغرب والی جمہوریت تھوڑی ہے جو کفر ہوا کرتی ہے؛ وہ جمہوریت تو ہمارے ہاں کہیں پائی ہی نہیں جاتی۔ جمہوریت جو ہمارے خیال میں ویسے ہی اسلام سے بے انتہا مماثلت رکھتی تھی اب ہمارے ہاں آتے آتے تو ان ’چند‘ نقائص سے بھی پاک کرلی گئی تھی جو مغربی اقوام نے اس میں ’بلاضرورت‘ ٹھونس دیے تھے۔ یہ سب ’غیر ضروری‘ اجزاء ’ہمارے والی‘ جمہوریت سے جھاڑ پونچھ دیے گئے تھے اور کچھ غیرموثر دفعات کااضافہ کرکے یہ اسلا م کے شایانِ شان بھی کرلی گئی تھی۔ گویا اس دام میں نہ آنے کی اب کوئی وجہ باقی نہ رہی تھی!

یاد رہے... اِس واقعہ کے بعد، اسلامی قوتوں کا پورا کیس ایک لحاظ سے داخل دفتر ہوگیا تھا۔ اسلام کے اِس کیس کوازسرنو اٹھانا اب جان جوکھوں کا کام ہوگیا ہے؛ بلکہ کچھ لوگوں کے الفاظ میں ’قومی اجماع کی خلاف ورزی‘! ان کا کہنا ہے ’اسلام‘ دستور کے حوالے ہوچکا؛ اور دستور ہی اب یہاں کا آخری حوالہ! یعنی بقیہ زمانے کےلیےاب  ’’اسلام‘‘ کی قسمت  اِس دستور اور اس کے بااختیار تعبیرکنندگان کے ساتھ وابستہ ہے یا پھر نمائندگانِ عوام کے اِس پر مہربان ہوجانے کے ساتھ۔ تاہم اِس موضوع پر کسی اور مقام پہ گفتگو ہوگی۔

ان ’اسلامی دفعات‘ کی بابت ہمارے یہاں جو لاحاصل بحثیں ہوتی رہیں (گو اَب جاکر اِن بحثوں کی گرمجوشی ذرا تھم گئی ہے کیونکہ میڈیا ہمیں قوم کے کچھ ’حقیقی‘ مسائل کی جانب متوجہ کرنے میں کامیاب ہو چلا ہے!)... ان بحثوں کے دوران اکثر جو چیز ہم نظر انداز کربیٹھتے رہے وہ یہ کہ اس نظام کی کونسی بات اتنی سنجید گی سے لینے کے قابل تھی۔ یہ تو وہ نظام ہے جسے معاشرے کے سبھی طبقوں کو ساتھ چلانا تھا؛ اور یہ اِس کی مجبوری ہے۔ ہر طبقے ہی کےلئے اس آئین میں کچھ نہ کچھ پایا جانا چاہیے تھا؛ تاکہ ہر طبقہ اپنےاپنے انداز اور اپنےاپنے زاویے سے آئین کی تشریح کرے؛ اور یوں سبھی ایک دوسرے سے الجھتے پھریں... اور  بالآخر مسئلہ ’آئین کی روح‘ کی جانب لوٹا کر بحث ختم کرادی جائے؛ ’آئین کی روح‘ جوکہ ایک غیرمرئی شےء ہے!

سبھی کا اتفاق ہے کہ شریعت کے موضوع پر آئین میں ایک ابہام ضرور ہے۔ اِس ابہام کو رفع کرنے کےلیے آئینی ترامیم پر مشتمل ایک شریعت بل بھی ہمارے اُن طبقوں کی جانب سے پیش کرنے کی کوشش ہوئی ہےجو  اس سے کچھ عشرے پیشتر اِس آئین کو اسلام کے تابع مان چکے تھے۔ بعد میں پتہ چلا کہ آئین تو سرے سے اسلام کے تابع نہیں ہے؛ صرف کچھ قوانین کو ’اسلام کے مطابق‘ کرنے کی بات ہوئی ہے اور اسی میں ایک بڑا ابہام ہے ( یہ واضح ہونے کے بعد ہی یہاں آئینی شریعت بل کی ضرورت جانی گئی مگر دستورساز ’اتھارٹی‘ نے اِس ’درخواست‘ کو قابل اعتنا نہیں جانا)۔ ہماری اِس گفتگو میں اسی آئینی ابہام یا دستوری رخنے  کی بات ہورہی ہے جس نے یہاں ’اسلامی قوانین‘ کے ہاتھ باندھ ڈالے ہیں۔

اکثر لوگوں کا خیال  ہے، آئین میں پایا جانے والا یہ ابہام کسی غفلت یا کوتاہی یا لاپروائی  کا نتیجہ ہے! بہت کم لوگ جانتے ہیں، یہ ابہام بجائےخود مقصود  ہے اور اِسی نے ہمارے مذہبی اور غیرمذہبی طبقوں کے مابین بیچ کی راہ نکال کر دی ہے۔ اِسی ابہام نے ان مختلف الخیال طبقوں کے چار عشرے اِس فنکاری کے ساتھ نکلوا دیے کہ بسیار کوشش کرلینے کے بعد بھی آئین سے نہ کسی فریق کے کچھ ہاتھ آیا اور نہ کسی فریق کی امید ٹوٹی! حق تو یہ ہے کہ اس آئین میں سبھی کچھ پایا جاتا ہے۔ اس میں کچھ اور داخل کرنے کی ضرورت کیا ہے؛ یہ بتایئے کس طبقے کےلئے اس میں کیا نہیں ہے!

چنانچہ ہم سے جو ایک بڑی بھول ہوئی وہ یہ کہ اس نظام کو اور اس کی اسلامی یا غیر اسلامی دفعات کو خوامخواہ سنجیدہ لے بیٹھے۔ یہ تو ایک چکر میں گھومنا تھا، اس کی بس یہی بات سنجیدہ تھی؛ باقی اس کے الفاظ اور تعبیرات پر جانا تو ایک خوامخواہ کی اضافی مشقت تھی۔

بنیادی طور پر یہ ایک استحصالی نظام ہے۔ اس میں ہر چیز کا استحصال ہونا تھا۔ ہمارا تو سو سال سے ہورہا تھا اب اسلام کا بھی ہمارے ساتھ ہونے لگا ۔ سادگی میں آکر اس کی اسلامی دفعات کی سب سے زیادہ تشہیر بھی ہم نے ہی کی۔ بھائیو ہم ان دفعات کو لے کر کہاں کہاں نہیں پھرے؟ کہا ں کہاں ان کے حوالے نہیں دیے؟ اب یہ کوئی ہماری بات تھوڑی تھی جو کہیں سنی ہی نہیں جائے! یہ دستور کے حوالے تھے ۔ آئین کی دفعات تھیں۔ ہم ان دفعات کے نمبر بتا سکتے تھے۔صفحات کی نشاندہی کرسکتے تھے۔ ہم ان کو لے کر عدالتوں میں پھرے۔ اسمبلیوں میں گئے۔ ایوانوں سے کہا کہ ظالمو اب یہ صرف قرآن اور حدیث کے حوالے تھوڑی ہیں جن کی اپنی کوئی دستوری حیثیت ہی نہیں۔ یہ تمہارے دستور کی دفعات ہیں اب تو سنو۔ ’’آئین‘‘ کی شقیں ہیں ان کا تو احترام کرو۔ کس نے ہماری سنی؟ہاتھ کیا آیا ؟ ہم بھی خراب ہوئے اور ہمارا دین بھی۔

چنانچہ اس نظام کے بارے میں مناسب ترین رویہ یہی ہوتا کہ اس کے ساتھ کچھ ایساسنجیدہ نہ ہوا جائے؛ نہ اس سے اسلام کی کوئی امید رکھی جائے اور نہ اس کے الفاظ اور عبارتوں پر اتنی جان کھپائی جائے۔ نہ ہی ہمیں اس نظام کے خلاف کوئی لمبےچوڑے نعرے لگانے کی ضرورت تھی ۔ بس معاشرے میں اسلام کی اصل بنیاد اٹھانے کے سلسلہ میں اپنے کام سے کام رکھا جاتا۔ اِس نظام کا متبادل دینے اور اِس کے کارپردازوں کا متبادل بننے والی ایک باصلاحیت جمعیت کی تیاری پر زور رکھا جاتا۔ ایسا کوئی جاندار تحریکی انفراسٹرکچر کھڑا کرنے پر محنت کرلی جاتی... تو  تب سے اب تک نہ جانے ہم کہاں سے کہاں پہنچ گئے ہوتے۔

حضرات ایک ایسے نظام سے آپ کیا توقع رکھ سکتے ہیں جس کی بنیاد ہی بددیانتی، دو رخی، استحصال، انتشار اور افراتفری پر رکھی گئی ہو اور ہر لمحہ اس میں پینترے بدلے جاتے ہوں!

 

Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
کچھ مسلم معترضینِ اسلام!
Featured-
باطل- جدال
حامد كمال الدين
کچھ ’مسلم‘ معترضینِ اسلام! تحریر: حامد کمال الدین پچھلے دنوں ایک ٹویٹ میرے یہاں سے  ہو۔۔۔
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر
Featured-
ثقافت- خواتين
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر اجالا عثمان انٹرنیٹ سے لی گئی ایک تحریر جو ہمیں ا۔۔۔
غامدى اور عصر حاضر ميں قتال
باطل- فرقے
اعتزال
ادارہ
ایک فیس بکی بھائی نے غامدی صاحب کی جہاد کے موضوع پر ویڈیو کا ایک لنک دے کر درخواست کی تھی کہ میں اس ویڈیو کو ۔۔۔
زیادتی زیادتی میں فرق ہے
باطل- فرقے
احوال- وقائع
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ایک بڑی خلقت واضح واضح اشیاء میں بھی فرق کرنے کی روادار نہیں۔ مگر تعجب ہ۔۔۔
دین پر کسی کا اجارہ نہ ہونا.. تحریف اور من مانی کےلیے لائسنس؟
باطل- كشمكش
حامد كمال الدين
تحریر: حامد کمال الدین کہتا ہے میں اوپن ایئر میں کیمروں کے آگے جنازے کی اگلی صف کے اندر ۔۔۔
اب اس کےلیے اہلِ دین آپس میں الجھیں!؟
احوال-
باطل- شخصيات و انجمنيں
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ’’تنگ نظری‘‘ کی ایک تعریف یہ ہو سکتی ہے کہ: ایک چیز جس کی دین میں گنجائش۔۔۔
شرک کے تہواروں پر مبارکباد دینے والے حضرات کے دلائل، ایک مختصر جائزہ
باطل- اديان
شیخ خباب بن مروان الحمد
شرک کے تہواروں پر مبارکباد دینے والے حضرات کے دلائل، ایک مختصر جائزہ تحریر: شیخ خباب بن مروان ا۔۔۔
دیوالی کی مٹھائی
باطل- اديان
حامد كمال الدين
دیوالی کی مٹھائی تحریر: سرفراز فیضی(داعی: صوبائی جمعیت اہل حدیث ممبئی ) *سوال*: کیا دیوالی کی مبارک باد دینا ۔۔۔
بائیکاٹ کا ہتھیار.. اور قومی یکسوئی کا فقدان
احوال-
باطل- كشمكش
تنقیحات-
حامد كمال الدين
بائیکاٹ کا ہتھیار.. اور قومی یکسوئی کا فقدان ہر بار جب کسی دردمند کی جانب سے مسلم عوام کو بائیکاٹ کا ۔۔۔
ديگر آرٹیکلز
Featured-
باطل- جدال
حامد كمال الدين
کچھ ’مسلم‘ معترضینِ اسلام! تحریر: حامد کمال الدین پچھلے دنوں ایک ٹویٹ میرے یہاں سے  ہو۔۔۔
اصول- منہج
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
پراپیگنڈہ وار propaganda war میں سیگ منٹیشن segmentation (جزء کاری) ناگزیر ہوتی ہے۔ یعنی معاملے کو ای۔۔۔
بازيافت-
ادارہ
ہجرت کے پندرہ سو سال بعد! حافظ یوسف سراج کون مانے؟ کسے یقیں آئے؟ وہ چار قدم تاریخِ ان۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
میرے اسلام پسندو! پوزیشنیں بانٹ کر کھیلو؛ اور چال لمبی تحریر: حامد کمال الدین یہ درست ہے کہ۔۔۔
احوال- امت اسلام
ذيشان وڑائچ
ہمارے کچھ نوجوان طیب اردگان کے بارے میں عجیب و غریب الجھن کے شکار ہیں۔ کوئی پوچھ رہا ہے کہ۔۔۔
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
’’سلفیوں‘‘ کے ساتھ تھوڑی زیادتی ہو رہی ہے!    عرب داعی محترم ابو بصیر طرطوسی کے ساتھ بہت م۔۔۔
اصول- عقيدہ
اداریہ-
حامد كمال الدين
شرکِ ’’ہیومن ازم‘‘ کی یلغار..  اور امت کا طائفہ منصورہ حالات کو سرسری انداز میں پڑھنا... واقعات م۔۔۔
احوال-
اصول- منہج
راہنمائى-
حامد كمال الدين
پاکستانی سیاست میں اسلامی سیکٹر کے آگے بڑھنے کے آپشنز تحریر: حامد کمال الدین میری نظر میں، اس۔۔۔
Featured-
ثقافت- خواتين
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فیمینسٹ جاہلیت کو جھٹلاتی ایک نسوانی تحریر اجالا عثمان انٹرنیٹ سے لی گئی ایک تحریر جو ہمیں ا۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
"نبوی منہج" سے متعلق ایک مغالطہ کا ازالہ حامد کمال الدین ایک تحریکی عمل سے متعلق "نبوی منہج۔۔۔
متفرق-
ادارہ
پطرس کے ’’کتے‘‘ کے بعد! تحریر: ابو بکر قدوسی مصنف کی اجازت کے بغیر شائع کی جانے والی ای۔۔۔
باطل- فرقے
اعتزال
ادارہ
ایک فیس بکی بھائی نے غامدی صاحب کی جہاد کے موضوع پر ویڈیو کا ایک لنک دے کر درخواست کی تھی کہ میں اس ویڈیو کو ۔۔۔
باطل- فرقے
احوال- وقائع
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ایک بڑی خلقت واضح واضح اشیاء میں بھی فرق کرنے کی روادار نہیں۔ مگر تعجب ہ۔۔۔
باطل- كشمكش
حامد كمال الدين
تحریر: حامد کمال الدین کہتا ہے میں اوپن ایئر میں کیمروں کے آگے جنازے کی اگلی صف کے اندر ۔۔۔
احوال-
باطل- شخصيات و انجمنيں
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین ’’تنگ نظری‘‘ کی ایک تعریف یہ ہو سکتی ہے کہ: ایک چیز جس کی دین میں گنجائش۔۔۔
جہاد- مزاحمت
احوال- امت اسلام
حامد كمال الدين
کشمیر کےلیے چند کلمات حامد کمال الدین برصغیر پاک و ہند میں ملتِ شرک کے ساتھ ہمارا ایک سٹرٹیجک معرکہ ۔۔۔
ثقافت- رواج و رجحانات
ذيشان وڑائچ
میرے ایک معزز دوست نے ویلینٹائن ڈے کے حوالے سے ایک پوسٹ پیش کی ہے۔ پوسٹ شروع ہوتی ہے اس جملے سے"ویلنٹائن ۔۔۔
بازيافت- تاريخ
ادارہ
علاء الدین خلجی اور رانی پدماوتی تحریر: محمد فہد  حارث دوست نے بتایا کہ بھارت نے ہندو۔۔۔
کیٹیگری
Featured
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
امت اسلام
ذيشان وڑائچ
امت اسلام
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
منہج
حامد كمال الدين
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
ادارہ
تاريخ
ادارہ
سلف و مشاہير
مہتاب عزيز
مزيد ۔۔۔
باطل
جدال
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
ادارہ
فرقےاعتزال
ادارہ
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
خواتين
ادارہ
رواج و رجحانات
ذيشان وڑائچ
معاشرہ
عرفان شكور
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ابن علی
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
ادارہ
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز