عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Thursday, June 4,2020 | 1441, شَوّال 11
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
2015-06 آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
اِس نوجوان پر ترس کیجئے
:عنوان

:کیٹیگری
حامد كمال الدين :مصنف

 

’مسلکی‘ و ’غیرمسلکی‘ اپروچ کے مابین پھنسے

اِس نوجوان پر ترس کیجئے

ایقاظ کے فائل سے

دین سمجھنے کےلیے ہمارا برصغیر کا نوجوان:

Р          یا تو ’مسلکوں‘ کے پاس جاتا ہے جو بالعموم اِس کو اُس دنگل کا حصہ بناتے ہیں جو ڈیڑھ سو سال سے  __  خاصی بے حسی کے ساتھ __  ہمارے اپنے ہی مابین لڑا جا رہا ہے اور جوکہ ہماری توانائیوں کو نچوڑ نچوڑ کر ضائع کرواتا چلا آیا ہے... اور وہ بھی اُس دور میں جب بدیسی استعمار ہمارے سروں پر مسلط تھا اور کفر کی نظریاتی و ثقافتی یلغار ہمارے گھر کی رہی سہی بنیادیں ہلا رہی تھی؛ اور جس نے بالآخر اِس گھر کی کوئی ایک بھی چیز سلامت نہیں رہنے دی ہے۔ پھر بھی ہم دیکھتے ہیں، یہ دنگل اُسی جوش و خروش اور اُسی جذبۂ حصولِ ثواب کے ساتھ جاری ہے!

Р          اور یا پھر... اِس نوجوان کا واسطہ اسلام کی اُس ’غیر مسلکی‘ تفسیر کے ساتھ پڑتا ہے جس کی رُو سے دین کا ہر مسئلہ بلکہ دین کا ہر عقیدہ ’نکتۂ نظر‘ قسم کی چیز ہے۔ یعنی اس میں ہر کوئی ’رائے‘ رکھنے کا مجاز ہے؛ اور ’رائے‘[1] سے آگے کچھ نہیں! چنانچہ یہاں کے وہ دینی طبقے جو ’مسالک‘ سے اب ایک طرح کی بیزاری ظاہر کرنے لگے ہیں، (اور یہ بھی اب کوئی کم مقبول فیشن نہیں)، ان کے یہاں آپ کو ایک مخصوص طرزِ تعامل نظر آتا ہے۔ جس کی رُو سے: دین کے ایک مسئلہ میں زیادہ سے زیادہ، ’رائے‘ رکھ لی جائے گی! دین میں جس درجہ کا بھی اختلاف ہونے لگا ہو، ایسے ہر اختلاف کے ساتھ ’رواداری‘ اختیار کروائی جائے گی...! ’منحرف‘ یا ’گمراہ‘ ایسے لفظ کا تو استعمال ہی اِس طبقہ کے نزدیک گویا حرام ہے اور ’’بدعتی‘‘ ایسی ڈراؤنی اصطلاح کو تو اپنی اسلامی لغت سے کھرچ ہی دینا چاہیے، بےلحاظ اِس سے کہ دین کا وہ کیا ناگزیر مفہوم ہے جس کو ادا کرنے کےلیے یہ اصطلاح ائمۂ سنت کے ہاں مستعمل رہی، اور بے پروا اِس سے کہ کیسی ہی خطرناک گمراہیاں اور کیسی ہی تباہ کن بدعات ہمارے اپنے زمانے میں کیوں نہ پائی جا رہی ہوں! دین کا سب سے بڑا فرض گویا کوئی ہے تو وہ رواداری ہے؛ توحید کا درجہ بھی شاید اس کے بعد آتا ہو!

Р          اور یا پھر... ہمارے اِس نوجوان کو ’جدت پسندوں‘ کے پاس جانا ہوتا ہے جوکہ ہے ہی یہاں پر استشراق کا کاشت کیا ہوا پودا، اور جوکہ اِس کو اسلام کے اُس پرانے اصیل تصور ہی سے برگشتہ کرا دینے کےلیے ہماری زمین میں بویا گیا ہے۔

چنانچہ.. جدت پسندوں کی روش کا تو ذکر ہی کیا، اور جوکہ اِن میں خطرناک ترین ہے... پہلی دو انتہائیں بھی کچھ کم تشویشناک نہیں:

£                 ایک انتہا پر یہ حال ہے کہ: کوئی شخص اگر آپ والے ’مسلک حقہ‘ پر نہیں تو وہ منحرف ہے اور اُس پر اپنے اُس انحراف سے تائب ہو کر آپ والے ’مسلک حقہ‘ کی طرف لوٹ آنا فرض...! نماز وہ جو ’آپ والی‘ مسجد میں ہو اور عبادت وہ جو ’آپ والے‘ طریقے پر ہو!... (’مسلکی‘ اپروچ!)

£                 تو دوسری انتہا پر یہ حال ہے کہ: دین کے چھوٹے مسئلے ہوں یا بڑے، فروع ہوں اور چاہے اصول، ’رائے‘ سے بڑھ کر کسی چیزکے متحمل نہیں! خاص اپنی تحقیق اور مطالعہ سے، ہر شخص یہاں ’رائے‘ اختیار کرے گا! اور چونکہ ہر شخص کو ’رائے‘ رکھنی ہے لہٰذا دین کے ہر ہر مسئلے اور ہر ہر شعبے میں ’اختلاف‘ کےلیے بھی آدمی کو غیرمعمولی طور پر دل کھلا رکھنا ہے! (’غیر مسلکی‘ اپروچ!)

اِن دو انتہاؤں کے بیچ، راہِ وسط کہاں ہے؟ اِس ’مسلکی‘ اپروچ اور اُس ’غیر مسلکی‘ اپروچ سے ہٹ کر، ایک ’’اصولی‘‘ طریقِ فکر کیا ہے؟ ... بڑی حد تک، جواب نہ دارد!

یہاں پر، ہمارے اِس نوجوان کے سامنے سب راستے گڈمڈ ہو جاتے ہیں۔ دین کے اصول اور فروع کی بابت ایک مستند اور متوازن فہم اس کو شاید ہی کہیں سے ملتا ہو۔ اِس کو یہ تو معلوم ہے کہ دین، اللہ کی کتاب سے لینا ہے اور اُس کے رسولؐ کی سنت سے لینا ہے، (کہ اس کے بغیر آدمی نجات کا امیدوار ہو ہی نہیں سکتا)، مگر کتاب اور سنت سے دین لینا کس طرح ہے؟ یعنی دین کو کیونکر سمجھنا ہے، اور تاریخی طور پر اس کے فہم کے مستند ترین مراجع ہماری تاریخ کے کونسے ادوار اور کونسے طبقے ہیں؟ اہل اتباع کے مابین یگانگت uniformity اور تنوع diversity برقرار رکھنے کےلیے درست ترین پیمانے کیا ہیں اور کہاں سے دستیاب ہوتے ہیں؟ دین کا فہم لینے کے اِس عمل میں کہاں کہاں وہ مقامات ہیں جہاں فراخ دلی سے کام لینا ہے اور ’’اختلاف‘‘ و ’’تعددِ مدارس‘‘ کو ٹھنڈے پیٹوں برداشت کرنا ہے.. اور کہاں کہاں وہ مقامات ہیں جہاں پر ’’اختلاف‘‘ کو ناقابل برداشت اور باعثِ تفرقہ وباعثِ ہلاکت جاننا ہے اور جہاں اختلاف ہونے پر ائمۂ سنت کے چہرے لال پیلے ہو جاتے رہے ہیں... یہ راہنمائی قریب قریب مفقود ہے۔

ایسے میں، دین کی ایک متوازن اور ٹھوس صورت سامنے آئے تو کیونکر؟

یہاں؛ ضروری ہوجاتا ہے کہ اہل سنت کا وہ منہج سامنے لایا جائے جس میں اصول اور فروع ہردو بابت ایک نہایت متوازن طریق کار دستیاب ہے۔ ناگزیر ہو جاتا ہے کہ...  کچھ علماء ’مسلکوں‘ سے اوپر اٹھ کر امت کو وہ راہنمائی دیں جس میں بدعتی فرقوں اور گمراہ ٹولوں سے بیزاری کا تصور بھی واضح ہو اور فروع میں ہونے والے اختلافات اور ان کی بنیاد پر قائم مسلکی تنوع کےلیے رواداری کا تصور بھی عیاں ہو۔

(از: مقدمہ ’’فہمِ دین کا مصدر‘‘۔ دوسرا ایڈیشن)

 

 

 



[1]    ’رائے‘ سے مراد یہ ہے کہ: اس سے مخالف رائے رکھنے والے کےلیے بھی آپ اپنا دل کھلا رکھیں۔ حالانکہ اسلام کے بےشمار مسائل ایسے ہیں جن میں اختلاف کی گنجائش نہیں؛ اور جو ان میں اختلاف کرے اس کو منحرف، گمراہ  اور بدعتی ماننا اور اس کے معاملہ میں ایک شدید موقف اپنانا ہوتا ہے۔

Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
ديگر آرٹیکلز
Featured-
احوال- وقائع
باطل- فرقے
حامد كمال الدين
شام میں حضرت عمر بن عبدالعزیزؒ کے مدفن کی بےحرمتی کا افسوسناک واقعہ اغلباً صحیح ہے حامد کمال الد۔۔۔
جہاد- دعوت
عرفان شكور
كامياب داعيوں كا منہج از :ڈاكٹرمحمد بن ابراہيم الحمد جامعہ قصيم (سعودى عرب) ضرورى نہيں۔۔۔۔ ·   ضرور۔۔۔
باطل- فرقے
Featured-
حامد كمال الدين
"المورد".. ایک متوازی دین حامد کمال الدین اصحاب المورد کے ہاں "کتاب" سے اگر عین وہ مراد نہیں۔۔۔
جہاد-
احوال-
Featured-
حامد كمال الدين
’دوحہ‘ اہل اسلام کی ’جنیوا‘ سے بڑی جیت، ان شاء اللہ حامد کمال الدین ہمیں ’’زیادہ خوش نہ ہونے۔۔۔
Featured-
حامد كمال الدين
اسلامی تحریک کا ’’مابعد تنظیمات‘‘ عہد؟ Post-organizations Era of the Islamic Movement یہ عن۔۔۔
حامد كمال الدين
باطل فرقوں کےلیے گنجائش پیدا کرواتے، دانش کے کچھ مغالطے   کچھ علمی چیزیں مانند (’’لازم المذھب لیس بمذھب‘۔۔۔
باطل- فرقے
حامد كمال الدين
شیعہ سٹوڈنٹ کے ساتھ دوستی، شادی بیاہ   سوال: السلام علیکم سر۔ یونیورسٹی میں ا۔۔۔
بازيافت- سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
امارتِ حضرت معاویہؓ، مابین خلافت و ملوکیت نوٹ: تحریر کا عنوان ہمارا دیا ہوا ہے۔ از کلام ابن ت۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
سنت کے ساتھ بدعت کا ایک گونہ خلط... اور "فقہِ موازنات" حامد کمال الدین مغرب کے اٹھائے ہوئے ا۔۔۔
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ! حامد کمال الدین دین میں طعن کر لو، جیسے مرضی دین کے ثوابت ۔۔۔
بازيافت-
حامد كمال الدين
تاریخِ خلفاء سے متعلق نزاعات.. اور مدرسہ اہل الأثر حامد کمال الدین "تاریخِ خلفاء" کے تعلق س۔۔۔
باطل- اديان
حامد كمال الدين
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ حامد کمال الدین اعتراض: اسلامی۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
لفظ  "شریعت" اور "فقہ" ہم استعمال interchangeable    ہو سکتے ہیں ۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
ماتریدی-سلفی نزاع، یہاں کے مسلمانوں کو ایک نئی آزمائش میں ڈالنا حامد کمال الدین ایک اشع۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
منہجِ سلف کے احیاء کی تحریک میں ’مارٹن لوتھر‘ تلاش کرنا! حامد کمال الدین کیا کوئی وجہ ہے کہ۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
      کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت حامد ۔۔۔
تنقیحات-
مشكوة وحى- علوم حديث
حامد كمال الدين
اناڑی ہاتھ درایت! صحیح مسلم کی ایک حدیث پر اٹھائے گئے اشکال کے ضمن میں حامد کمال الدین ۔۔۔
راہنمائى-
حامد كمال الدين
(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات ابن قدامہ مقدسی رحمہ اللہ کے متن سے۔۔۔
کیٹیگری
Featured
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
وقائع
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
سلف و مشاہير
شيخ الاسلام امام ابن تيمية
حامد كمال الدين
ادارہ
مزيد ۔۔۔
باطل
فرقے
حامد كمال الدين
فرقے
حامد كمال الدين
فرقے
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
جہاد
دعوت
عرفان شكور
حامد كمال الدين
مزاحمت
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز