عربى |English | اردو 
Surah Fatiha :نئى آڈيو
 
Tuesday, September 24,2019 | 1441, مُحَرَّم 24
رشتے رابطہ آڈيوز ويڈيوز پوسٹر ہينڈ بل پمفلٹ کتب
شماره جات
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
  
 
تازہ ترين فیچر
Skip Navigation Links
نئى تحريريں
رہنمائى
نام
اى ميل
پیغام
2010-10 آرٹیکلز
 
مقبول ترین آرٹیکلز
امریکہ، بنیاد پرستی اور ماڈریٹ طبقے کی کشمکش
:عنوان

:کیٹیگری
ادارہ :مصنف

 
اخبار وآراء

امریکہ، بنیاد پرستی اور ماڈریٹ طبقے کی کشمکش
ابو زید

   
انسانی فکر میں اختلاف اور طرز فکر میں تنوع کا ہونا ایک فطری بات ہے بلکہ کسی بھی معاشرے کی نشوونما اور ارتقاءکی بہت بڑی ضرورت۔ لیکن جب کسی قوم کا برا وقت آتا ہے تو پھر انسانی فطرت میں رکھی ہوئی بہت سی خیر معطل ہو جاتی ہے بلکہ کچھ ایسا رخ اختیار کرلیتی ہے کہ یہ اس معاشرے یا قوم کے زوال اور ٹوٹ پھوٹ کا ذریعہ بن جائے۔ جب کوئی قوم اس دنیا کے لئے مثبت رول ادا کرنے کے قابل ہوتی ہے تو یہی فکری تنوع اس معاشرے کا ایک اثاثہ ہوتا ہے۔لیکن جب یہی قوم اس عالم کے لئے ایک بوجھ بن جاتی ہے تو پھر یہی فکری تنوع ایسا اختلاف اختیار کرلیتا ہے کہ ان کا اپنا اثاثہ ان پر بوجھ بن جاتا ہے۔ شاید یہ عمرانی بقائے اصلح(survival of fittest) کا کوئی فطری قانون ہے۔
امریکی معاشرے میں بھی کچھ اس طرح کے اختلافات ابھر کرآرہے ہیں جس کے دور رس اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔ نائن الیون کے نو سال کے بعد بھی اسلاموفوبیا کا طوفان تھمتا بڑھتا کچھ اس طرح سے لہریں لے رہا ہے کہ ختم ہونے میں نہیں آرہا ہے۔امریکہ میں مقیم مسلمان جان توڑ کوشش کر رہے ہیں کہ کسی طرح سے امریکی عوام یہ سمجھیں کہ "شدت پسندوں اور دہشت گردوں کا اسلام اصل نہیں ہے۔ بلکہ اسلام تو امن کا مذہب ہے۔ اصل مسلمان تو امریکی مسلمان ہیں"۔ لیکن اس جان توڑ کوشش کے باوجود امریکہ کی اکثریت یہ تسلیم کرنے کو تیار نہیں ہے۔امریکہ کے دانشوروں کا طبقہ کسی طرح سے کوشش کررہا ہے کہ امریکی عوام ایک ایسے کٹے پھٹے اسلام جو کہ مغربی تہذیب کو کوئی چیلینج کرتا نظر نہ آئے کو ہی قبول کرلیں تاکہ مزیدشدت پسندی کو روکا جائے۔ لیکن عوام اس کو رد کیے جارہے ہیں۔صورت حال یہ ہے کہ ایک عام امریکی مسلمان اس وقت الجھن میں ہے کہ امریکہ میں کبھی بھی اسے اپنا سمجھا جائے گا۔ واضح ہو یہ صورت حال اس سب کے باوجود ہے کہ امریکہ کی تقریباًتمام معروف مسلمان شخصیات نے نائن الیون کی کڑی مذمت کی ہے اور اس کو اسلام کے منافی عمل قرار دیا ہے۔
اگرچہ کہ قرآنی صحیفوں کو جلانے کے اعلان کو امریکی ضمیر نے تسلیم نہیں کیا اور پورے امریکہ میں اس کی مخالفت کی گئی، لیکن امریکہ نے اپنی برداشت کی حد کا اظہار پھر بھی کردیا۔ امام فیصل عبد الرؤف نے نائن الیون کے جائے وقوعہ سے کچھ آگے ایک بڑے جدید قسم کے اسلامی سینٹر کا اعلان کیا جس میں ٹینس کورٹ اور سومنگ پول بھی ہونگے اور چونکہ یہ ایک اسلامی سینٹر ہوگا اس لئے یہاں پر مسجد بھی ہوگی۔پھر کیا تھاپورے امریکی میڈیا میں ہنگامہ برپا ہوگیا کہ مسلمان گراؤنڈ زیرو (سابقہ ورلڈ ٹریڈ سینٹر کی جگہ) پر مسجد بنانے جارہے ہیں۔ امام فیصل صاحب بے چارے اس اسلامی سینٹر کے ذریعے سے امریکی عوام کو ایک "مثبت پیغام" دینے کی کوشش کر رہے تھے کہ عام امریکی مسلمان نائن الیون کے واقعے کی مذمت کرتا ہے اور امریکی عوام کے ساتھ ہے۔ لیکن امریکہ کی شدت پسند لابی ایسے کسی پیغام کو امریکی عوام تک پہنچنے سے روکنا چاہتی ہے۔ مسئلہ صاف ہے۔ امریکہ کی ایک خاصی تعداد کے لئے اصل مسئلہ شدت پسندی نہیں بلکہ اسلام ہے اور صحیح تر بات یہ ہے کہ اسلام بھی نہیں بلکہ اسلام کا نام ہی اصل مسئلہ ہے۔ یہ امریکی مسلمان ایسے اسلام کی نمائندگی کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جس میں کوئی انقلابی پیغام نہیں ہے، کوئی تبدیلی کی دعوت نہیں ہے بلکہ حق اور باطل میں فرق ہی نہیں۔ لیکن شاید امریکہ کے کسی بھی مسلمان کے لئے اپنے مذہب کا نام تبدیل کرنا بہت مشکل ہوگا۔
اسی سلسلے کی ایک اور خبر کافی دلچسپ ہے۔ امریکی ریاست ٹیکساس کے اسکول بورڈ نے کتابوں کے پبلشر کو وارننگ دی ہے کہ نصابی کتابوں میں عیسائیت کے خلاف مواد پیش نہ کریں اور اسلام کو زیادہ مثبت اندازمیں واضح نہ کیا جائے۔بلکہ اسی ٹیکساس اسکول بورڈ نے اعلان کیا ہے کہ اگلے دس سال میں غلامی کی اچھائیوں اور غلامی کے بیوپارکے امریکی معیشت پر مرتب شدہ مثبت اثرات کے بارے میں بھی سکھایا جائے گا۔ شاید یہ اپنے سیاہ ترین ماضی کو جواز فراہم کرنے کی ایک کوشش ہے۔واضح ہو کہ یہ وہی امریکہ ہے کہ ایک طرف کٹر عیسائی امریکی معاشرے پر کسی طرح اثر انداز ہونے کی کوشش کر رہے ہیں اور دوسری طرف یہی امریکہ لادینیت، مادر پدر آزادی اور ہم جنسیت کا گڑھ ہے۔ آنے والا وقت بتائے گا کہ اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا۔
حوالہ جات
Print Article
Tagged
متعلقہ آرٹیکلز
ديگر آرٹیکلز
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
Featured-
حامد كمال الدين
"انسان دیوتا" کے حق میں پاپ! حامد کمال الدین دین میں طعن کر لو، جیسے مرضی دین کے ثوابت ۔۔۔
Featured-
بازيافت-
حامد كمال الدين
تاریخِ خلفاء سے متعلق نزاعات.. اور مدرسہ اہل الأثر حامد کمال الدین "تاریخِ خلفاء" کے تعلق س۔۔۔
Featured-
باطل- اديان
حامد كمال الدين
ریاستی حقوق؛ قادیانیوں کا مسئلہ فی الحال آئین کے ساتھ حامد کمال الدین اعتراض: اسلامی۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
لفظ  "شریعت" اور "فقہ" ہم استعمال interchangeable    ہو سکتے ہیں ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
ماتریدی-سلفی نزاع، یہاں کے مسلمانوں کو ایک نئی آزمائش میں ڈالنا حامد کمال الدین ایک اشع۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
حامد كمال الدين
منہجِ سلف کے احیاء کی تحریک میں ’مارٹن لوتھر‘ تلاش کرنا! حامد کمال الدین کیا کوئی وجہ ہے کہ۔۔۔
Featured-
احوال-
حامد كمال الدين
      کشمیر کاز، قومی استحکام، پختہ اندازِ فکر کی ضرورت حامد ۔۔۔
تنقیحات-
Featured-
مشكوة وحى- علوم حديث
حامد كمال الدين
اناڑی ہاتھ درایت! صحیح مسلم کی ایک حدیث پر اٹھائے گئے اشکال کے ضمن میں حامد کمال الدین ۔۔۔
راہنمائى-
حامد كمال الدين
(فقه) عشرۃ ذوالحج اور ایامِ تشریق میں کہی جانے والی تکبیرات ابن قدامہ مقدسی رحمہ اللہ کے متن سے۔۔۔
تنقیحات-
ثقافت- معاشرہ
حامد كمال الدين
کافروں سے مختلف نظر آنے کا مسئلہ، دار الکفر، ابن تیمیہ اور اپنے جدت پسند حامد کمال الدین دا۔۔۔
اصول- منہج
باطل- فكرى وسماجى مذاہب
اصول- عقيدہ
حامد كمال الدين
ایک ٹھیٹ عقائدی تربیت ہماری سب سے بڑی ضرورت حامد کمال الدین اسے فی الحال آپ ایک ناقص استقر۔۔۔
ثقافت- خواتين
ثقافت-
حامد كمال الدين
"دردِ وفا".. ناول سے اقداری مسائل تک حامد کمال الدین کوئی پچیس تیس سال بعد ناول نام کی چیز ہاتھ لگی۔ وہ۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
امارات کا سعودی عرب کو یمن میں بیچ منجدھار چھوڑنے کا فیصلہ حامد کمال الدین شاہ سلمان کے شروع دنوں میں ی۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
پاک افغان معاملہ.. تماش بینی نہیں سنجیدگی حامد کمال الدین وہ طعنے جو میرے کچھ مخلص بھائی او۔۔۔
احوال-
حامد كمال الدين
کلچرل وارداتیں اور ہماری عدم فراغت! حامد کمال الدین ظالمو! نہ صرف یہاں کا منبر و محراب ۔۔۔
احوال-
ادارہ
تحریر:   تحریم افروز یوں تو امریکا سے مسلمانوں  کے معاملے میں کبھی خیر کی توقع رہی ہی&۔۔۔
احوال-
ادارہ
تحریر: فلک شیر کچھ عرصے سے فلسطین کے مسئلے کے حل کے لیے امریکی صدر ٹرمپ کی "صدی کی ڈیل" کا شہرہ ہے۔دو سال ۔۔۔
تنقیحات-
حامد كمال الدين
حامد کمال الدین بعض مباحث بروقت بیان نہ ہوں تو پڑھنے پڑھانے والوں کے حق میں ایک زیادتی رہ جاتی ہے۔ جذبہ۔۔۔
کیٹیگری
Featured
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
Side Banner
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
احوال
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اداریہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
اصول
عقيدہ
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
منہج
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ایقاظ ٹائم لائن
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
ذيشان وڑائچ
مزيد ۔۔۔
بازيافت
حامد كمال الدين
ادارہ
تاريخ
ادارہ
مزيد ۔۔۔
باطل
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
اديان
حامد كمال الدين
فكرى وسماجى مذاہب
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
تنقیحات
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
ثقافت
معاشرہ
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
خواتين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
جہاد
مزاحمت
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
راہنمائى
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
رقائق
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
اذكار و ادعيہ
حامد كمال الدين
مزيد ۔۔۔
فوائد
فہدؔ بن خالد
احمد شاکرؔ
تقی الدین منصور
مزيد ۔۔۔
متفرق
ادارہ
عائشہ جاوید
عائشہ جاوید
مزيد ۔۔۔
مشكوة وحى
علوم حديث
حامد كمال الدين
علوم قرآن
حامد كمال الدين
مریم عزیز
مزيد ۔۔۔
مقبول ترین کتب
مقبول ترین آڈيوز
مقبول ترین ويڈيوز